عمران خان کا جلسہ یا میمو سکینڈل اجاگر کرنے کیلیے جنرل پاشا شو ؟؟؟؟



  • منصور اعجاز کے فینشئل ٹائمز میں میمو سکینڈل سامنے لانے کے بعد آئی ایس آئی کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل احمد شجاع پاشا نے گزشتہ 22/ اکتوبر کو لندن جاکر منصور اعجاز سے ملاقات کی اور تمام ثبوت اور مواد حاصل کیا. شروع میں آئی ایس آئی نے اس سکینڈل کو اجاگر کرنے کے لیے میڈیا کو استعمال کیا. پاکستانی میڈیا اور خصوصا ڈاکٹر شاہد مسعود نے اپنے پروگرام شاہد نامہ میں اس سکینڈل کا نہایت ہی مشکوک انداز میں بار بار ذکر کیا. غالبا میڈیا کے ذریعے اس سکینڈل کو اجاگر کرنے میں خاطر خواہ کامیابی نہ ملنے پر آئی ایس آئی نے عمران خان کو استعمال کرنے کا فیصلہ کیا. عمران خان کے جلسے سے دو دن قبل ڈاکٹر شاہد مسعود کا یہ بتا دینا بھی بہت معنی خیز تھا کہ عمران خان اس جلسہ میں اس سکینڈل کا خصوصی ذکر کریں گے. جلسہ میں عمران خان نے جس انداز میں اس سکینڈل کا ذکر کیا وہ بذات خود معنی خیز تھا

    آئی ایس آئی کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل احمد شجاع پاشا کی گزشتہ 22/ اکتوبر کو منصور اعجاز سے ملاقات کی خبر کے بعد یہ بات قرین قیاس معلوم ہوتی ہے کہ آئی ایس آئی نے اسے عمران خان کے جلسہ کے ذریعے اجاگر کرنے کا فیصلہ کیا اور اس کے لیے عمران خان کو آمادہ کیا. اس آمادگی کے صلے میں آئی ایسا آئی نے جلسہ کو کامیاب بنانے کی زمہ داری لی جسکا اظہار میڈیا کی متعدد رپورٹوں میں کیا گیا ہے. یاد رہے کہ عمران خان جنرل پاشا سے اپنی خفیہ ملاقاتوں کا کئی بار اعتراف کر چکے ہیں

    کیا یہ جلسہ واقعی عمران خان کا تھا یا پھر میمو سکینڈل اجاگر کرنے کے لیے جنرل پاشا کا شو تھا؟



  • @bawa ji

    hahahaha......what a frustrated person you are...... :d....



  • @ cutenice62

    بدل کر فقیروں کا ہم بھیس غالب

    تماشائے اہل کرم دیکھتے ہیں

    :)



  • @bawa ji

    agar aap sathyaa gayee hain tu ghalib ko tu na majrooh karain.......



  • میمو اسکینڈل میں شدت اس وقت زیادہ آ‏ئی جب مائیک مولن نے پہلے لاعلمی کا اظہار کرنے کے بعد اس میمو کے ملنے کی تصدیق کردی جو کہ تیس اکتوبر کے جلسے کے بعد کی گئی۔

    یہاں اب سوال یہ پیدا ھوتا ھے کہ عمران خان کو مائیک مولن کی تصدیق سے پہلے اس خط کی تصدیق کس نے کروا کر دی؟ اور وہ کون سے ذرائع تھے جن کی بنیاد پر عمران نے اپنے جلسے میں اس خط کا بڑے وثوق سے ذکر کیا جبکہ اس وقت تک پاکستانی میڈیا بھی اس میمو کے تصدیق شدہ ہونے سے بے خبر تھا۔



  • @ cutenice62

    سچی باتیں بری کیوں لگتی ہیں؟؟؟

    بڑے فخر سے بیان دیا تھا کہ ساٹھ فیصد پارلیمنٹیرین ہمارے ساتھ ہیں

    کسی ایک نے بھی گھاس نہیں ڈالی - آخری دوسری پارٹیوں کے ٹھکرائے ہوؤں پر ہی گزارا کرنا پڑا

    آپکی حالت واقعی قابل رحم ہے - ایک ماہ میں ہی غبارے سے ساری ہوا نکل گئی

    پاشا ہے کہیں کہ تھوڑی اور ہوا بھر دے

    :)



  • @ karin

    انہوں نے (جنرل پاشا) نے منصور اعجاز سے گزشتہ 22/ اکتوبرکو پارک لین انٹر کانٹی نینٹل ہوٹل لندن کے کمرے 4/ گھنٹے ملاقات کرنے کے بعد خان صاحب کو اس خبر کی سچائی کی تصدیق کر دی تھی

    اور خان صاحب سے کہا تھا کہ وہ بھی "ہمارے" جلسے میں اسکی تصدیق کرے



  • @bawa ji

    aap nay jalsay walay din yeh fact kion nahi bataya ???? or IK nay tu saaf ilfaaz may kaha tha jalsay k foran baad k american press may anay wali khabar ko base bana k unhoon nay yeh baat ki hai.....coz jis akhabar nay khabar de thi woo factual reporting karta hai.......abb please zara sathyayee hoi bataoon k bajayee zara factual jawab dain.....or aap ko abb he yaad ana tha yeh dawaa karna????? come on bawa ji koi tu facts pay bhi baat kia karain....... is umar may lagta hai ghar beth k storiyan ghartay rehtay hain :d



  • @Bawa,

    How can ISI pull out such a large jalsa and make it successful? Even money can bring only a limited number of people and even that without the evident enthusiasm. ISI has no ability to any thing of the kind, so your entire argument goes into the trash tin.

    Imran Khan mentioned the memo because unlike the Dumb Sharif, Imran Khan regularly reads international newspapers and journals to update himself about on-going political situation in and out of Pakistan. He has on countless occasions shown his in-depth knowledge on different matters, quoting American generals, foreign officials, giving references to journals, books, etc.

    So Imran Khan knew the importance of such a revelation in a respected journal like Financial Times. In a question about his mention of the memo after OCT 30 jalsa, he mentioned the credibility of Financial Times as his reason for talking about the memo in the Jalsa in front of lacs of people.

    This episode once again shows the better judgement and up to date knowledge of Imran Khan on local and international matters compared to Dengue Brothers and other incompetent leaders of the kind.



  • @change IK

    dheeraj yaar..bawa ji ko yeh english samjh nahi ati......unhoon nay janooon may aa k establishment establishment karna shoro kar dena hai........ kia howa agar mian sb angraizi akhbaar nahi parhtay......unhain lotay howay dollars tu ginana atay hain na.....

    bawa ji please dont take tension on facts........Narayeee bawa ji "establishment establishment"



  • دلچسپ بات یہ ہے کہ میری طرح کئی لوگوں کو اس خط کی خبر پہلی بار عمران خان کے جلسے سے ہوئی۔ جبکہ منصور اعجاز کا مضمون ایف ٹی میں دس اکتوبر کو شائع ہوا۔ اور سب سے مزے کی بات یہ کہ حقانی صاحب نے بھی اس خط کی تردید عمران خان کے جلسے کے بعد ہی کرنا مناسب سمجھا نہ کہ منصور اعجاز کا مضمون شائع ہونے کے بعد۔



  • cutenice62

    bawa ji

    aap nay jalsay walay din yeh fact kion nahi bataya ????

    آپکی طرح میری جنرل پاشا سے کوئی علیک سلیک ہوتی تو میں بھی پہلے بتا دیتا. آج پاشا اور منصور اعجاز کی بائیس اکتوبر کو ملاقات کی تصدیق ہوئی ہے تو سارا معاملہ سب کی سمجھ آ گیا ہے

    جو سمجھ جائے اسکا بھی بھلا - جو سمجھکر بھی انجان بن جائے اسکا بھی بھلا



  • @ cutenice62

    change IK

    dheeraj yaar..bawa ji ko yeh english samjh nahi ati....

    ممی ڈیڈی انقلابی بچے

    http://www.youtube.com/watch?v=rQcoDLrJv4c



  • @bawa ji

    itni boooodi (baseless) daleeel detay howay aap ko nawaz sharif ki tarhan koi sharmindagi nahi hoi hoo gi...:d

    hahahaa.........IK zindabad :)



  • ChangeIK,

    Everyone knew about the FT article before 30 Oct Jalsa of IK but no one knew about the authenticity of this article until Mike Mullen's acknowledgement came in the press which make this memo actually a scandal.

    So the question is how did IK knew the authenticity of this article prior to the acknowledgement of the recipient of this article?? He must be having some inside source to do the digging for him?? Right??? Can you name the source who revealed this news to IK???



  • باوا جی!

    جنرل پاشا اور منصور اعجاز کی مبینہ ملاقات میں کس قدر صداقت ہے؟ آپ کس ذرائع سے اسکا ذکر کر رہے ہیں؟



  • @ karim

    ڈی جی آئی ایس آئی نے 22/ اکتوبر کو منصور اعجاز سے ملاقات کی...شاہین صہبائی/محمد مالک

    http://search.jang.com.pk/details.asp?nid=574564



  • @karim

    dear imran khan nay us akhbar ki reporting ki base pay bayan dia tha........and FYI ChangeIK nay us ka naam bhi mention kiya howa hai........or us ki reporting authenticity bhi hai........so baar baar aik he sawal karna munasib nahi...... is ka jawab may bhi day chuka hoon or IK bhi or ab phir day diya hai......abb tu may na manoo wali baat nahi honi chahiyay....... :)



  • @ ChangeIK

    کیا عمران خان نے اعجاز منصور کی سٹوری پر بلا تصدیق یقین کر لیا تھا جبکہ ابتدائی سٹوری میں اس نے کوئی سبوت بھی مہیا نہیں کیا تھا؟

    اسوقت اس سٹوری کی حقیقت جنرل پاشا کے علاوہ کوئی نہیں جانتا تھا

    تو پھر عمران خان نے کیسے جلسہ میں بلا تصدیق اتنی بڑی بات زرداری کو مخاطب کرکے کہی؟

    ڈاکٹر شاہد مسعود کو کس طرح پتہ تھا کہ عمران خان جلسے میں اس خط کا خصوصی ذکر کریں گے؟



  • باوا جی!

    شاہین صہبائی اور مالک صاحب بھی قیاس آرائی سے کام لے رہے ہیں کوئی باوثوق انداز میں نہیں کہ رہے۔ بہرحال اس سارے معمے نے عمران خان کے کردار پرتو یقینا سوالیہ نشان ڈال دیا ہے کہ آخر انکو کن ذرائع سے اس خط کے تصدیق شدہ ہونے کا انکشاف ہوا۔