.نواز شریف کی جھوٹی اور منافقانہ سیاست



  • Hasan Nisar offers an overview of Nawaz Sharif’s tenures as Prime Minister of Pakistan:

    میاں صاحب!مستقبل کی بات کریں…چوراہا …حسن نثار

    کیا (ن) لیگ میں ایک شخص بھی ایسا نہیں جو اپنے لیڈر کو اک ایسی بات کی تکرار سے رو ک سکے جو بے بنیاد بھی ہے اور مضحکہ خیز بھی۔ میاں نواز شریف تسلسل سے یہ بات دہرائے جارہے ہیں کہ”تبدیلی“ لانے کے دعویدار تو جب لائیں گے لیکن ہم تو کب سے تبدیلی لا بھی چکے۔ ہم نے موٹروے بنائی، ایٹمی دھماکے کئے اور سبز پاسپورٹ کو سربلند کیا اور ہمارے زمانہ میں دہشتگردی کا نام و نشان نہ تھا یعنی میاں صاحب اپنے زمانہ کو ”سنہرا دور“ قرار دینے پر مصر ہیں اور نیوٹرل لوگ اس کا مذاق اڑارہے ہیں۔

    لوگ پوچھ رہے ہیں کہ کیا یہ وہی سنہرا زمانہ نہیں تھا جب بھوک کے مارے چن زیب نامی اک پاکستانی نے آپ کے گھر کے سامنے کامیاب خود سوزی کی تھی؟ اور یہ عہد خود سوزی تھا ۔

    کیا یہ وہی دور نہ تھا جب یہ سرخی بھی کسی اخبار کی زینت بنی کہ……”شیر آٹا کھا گیا“

    کیا یہی وہ گولڈن پیریڈ نہیں تھا جب ”ریاض بسرا“ جیسی بلائیں اس ملک میں دندناتی پھرتی تھیں؟

    اور کیا یہ اسی زمانے کی بات نہیں جب عدلیہ پر چڑھائی ہوئی اور اس کے نتیجہ میں کچھ متوالے نااہل قرار دئیے گئے؟ اور آج تک …”پھرتے ہیں میر خوار کوئی پوچھتا نہیں“ ۔

    اور کیا یہی وہ زریں عہد نہیں تھا جس میں اک ڈکٹیٹر کے شب خون پر آپ کی حکومت کا تختہ الٹا گیا تو لاہور جیسے شہر میں لوگوں نے اس قدر مٹھائیاں تقسیم کی کہ سویٹ شاپس خالی ہوگئیں۔

    کیا آپ کا دورہی وہ دور نہیں تھا جب ڈالر اکاؤنٹ منجمد کرکے ملکی معیشت کا بیڑہ غرق کردیا گیا تھا اور لاتعداد گھر برباد ہوگئے۔

    کیا یہی وہ ”مبارک “ زمانہ نہیں تھا جب فرقہ واریت کا عفریت سرعام نمازیوں تک کا خون پی رہا تھا؟یہاں تک کہ خود ظل سبحانی اور قائد اعظم ثانی بھی قاتلانہ حملہ سے محفوظ نہ رہ سکے اور رائے ونڈ روڈ پر بال بال بچے۔

    یہی دور تھا ناں جب سیاسی انتقام بذریعہ احتساب الرحمن ساتویں آسمان پر محو پرواز تھا جس کا ٹارگٹ بینظیر بھٹو نامی وہ خاتون بھی تھی جس کے ساتھ آپ نے ”میثاق جمہوریت“ پر دستخط فرمائے اور آج یہ دستاویز آپ کو بے حد عزیز ہے۔ آصف زرداری صاحب کی زبان پر بھی جمہوری داستان بھی تب ہی رقم کی گئی۔

    کیا یہی دور نہ تھا جب ارتکاز طاقت کے شوق میں ہر طاقت کے ساتھ محاذ آرائی کو بڑھاوا دیا گیا جو”بارہ اکتوبر“ کا باعث بنا جس نے ملک کی چولیں ہلا دیں۔

    پرویز مشرف پاکستان کے لئے ”بری خبر“ تھے تو اس بری خبر کو جنم کس نے دیا اور جنرل پرویز مشرف کس ”جینئس“ اور”وژنری“ کی چوائس تھے؟ اور کیوں؟

    کیا ”پیلی ٹیکسی سکیم“ معیشت کے منکے پر ضرب کاری اک خالصتاً غیر اقتصادی اور سیاسی فیصلہ نہ تھا؟…سستی سیاسی مقولیت و شہرت کی اک بے حد مہنگی کوشش جس کی قیمت ملکی خزانے نے چکائی کہ اچھی سکیم میں ہمیشگی ہوتی ۔

    کیا آپ بھول گئے کہ آپ کے سنہری یا آہنی دور حکومت کے دوران قیمتوں میں اضافہ کی شرح کیا تھی؟ فی کس آمدنی کتنی تھی؟ زرمبادلہ کے ذخائر کتنے رہ گئے تھے؟ اور بے روزگاری کا حال کیا تھا؟

    کیا یکساں نصاب تعلیم جاری ہوگیا تھا؟ زرعی اصلاحات نافذ کردی گئی تھیں؟ ملاوٹ ختم ہوگئی تھی یا جعلی دوائیں بننی بکنی بند ہوگئی تھیں؟ پاپولیشن مینجمنٹ کی طرف توجہ دی گئی تھی یا لاء اینڈ آرڈر میں کوئی بہتری دیکھی گئی تھی؟ تھانہ کلچر تو آج تک سو فیصد وہی ہے حالانکہ گزشتہ چند سال سے پنجاب پر پھر آپ کی حکومت ہے؟ کوئی انقلابی زرعی پالیسی آئی تھی یا صنعتی؟ کتنے نئے چھوٹے شہروں کی بنیاد رکھی گئی تاکہ دیہی علاقوں سے شہروں پر یلغار کی حوصلہ شکنی ہوسکے؟ مقامی حکومتوں کا حال کیسا تھا؟ انتخابی اصلاحات ہوئی تھیں یا جعلی ووٹرویڈ آؤٹ کیا گیا تھا؟ دہری شہریت پر بین لگایا؟ عطائی ڈاکٹرز ختم کئے؟ میڈیا کا یہ سیلاب بھی مشرف صاحب کا تحفہ ہے ،آپ یا کوئی اور سیاسی ہوتا تو یہ ”جرم“ اور گناہ“ کبھی نہ کرتا؟ پینے کے صاف پانی کی کہانی کا انجام بھی”سرانجام“ ہے اور شرح خواندگی میں کتنا اضافہ ہوا تھا؟

    میاں صاحب!

    سچ تو یہ ہے کہ آپ… آپ سے پہلے اور آپ کے بعد کسی نے کبھی کسی حقیقی تبدیلی کے لئے کچھ نہیں کیا۔ بھٹو سیاست کو ڈرائینگ روم سے نکال کر چوراہے میں لایا جو واقعی خوفناک ”تبدیلی“ تھی اور اسی لئے وہ آج تک زندہ ہے… باقی سب ٹوپی ڈرامے اور سطحی سیاست یا ڈنگ ٹپاؤ دھندے اور گونگلوؤں سے مٹی جھاڑ کر شب دیگ پکانے کے مترادف ہے۔ آپ لوگوں نے تو آج بھی سیکورٹی کی آڑ میں سرکاری سڑکوں پر قبضے کرکے عوام کے رستے روک رکھے ہیں اور آپ کے روٹ ہی ختم ہونے میں نہیں آتے تو آپ سے تبدیلی کی توقع؟؟؟

    اے امیر المومنین جیسے منصب کے امیدوار! بڑے لیڈر شخصیات اور واقعات سے ماورا ہو کر نئے موضوعات اور نئے عنوانات کے نقیب ہوتے ہیں۔موٹر ویز، ایٹم بم اور ائیر پورٹس سے نہ عوام کو علم ملتا ہے نہ علاج نہ عزت نفس…یہ”منزلیں“ نہیں بلکہ ان تک پہنچنے کے مختلف”رستے“ ہیں۔ قائدین اپنی قوموں کی اپ گریڈیشن کو ٹارگٹ کرتے ہیں۔ عام آدمی کو موٹر وے، ایٹم بم اور ائیر پورٹ سے کیا لینا دینا؟ایٹم بم آپ کی بے تحاشہ دولت اور غریب کی غربت کا محافظ ہے اور کیا یہ سب مل جل کر بھی اس کا مقدر بدل سکے؟ سو پلیز !ماضی سے نکل کر مستقبل کی فکر کریں، کوئی وژن دیں، کسی نئی حکمت عملی کااعلان کریں۔ آپ کی جلا وطنی جبری تھی اور لمبی بھی، میری جلا وطنی خود ساختہ تھی اور مختصر بھی…جو زخم آپ کو لگے مجھے ان کا بھرپور اندازہ ہے لیکن افسوس آپ کی سمت اور ترجیحات درست نہیں… ماضی پر جزوی مٹی ڈال کر کلی طور پر مستقبل پر فوکس کریں ورنہ سب کچھ”آؤٹ آف فوکس“ ہوجائے گا



  • Gazetted Chawal by a gazetted Chawalian Master



  • Gazetted Chawal by a gazetted Chawalian Master..


    first time Agreed a Title abt nawaz sharif...

    congrats:::



  • siddiqi73@

    Jab sach etana seedah aur karwah ho, tao phir us ka koi jawab nein hota. Us ke jawab mein seraf oul foul ghandi Zaban hoti ha.



  • @Shahji,

    Ab mujh ko patta chal giya hai kay aap kaisay ghaleez aur mailay aadmi ko phar kar apna standard roz ba roz gira rahay ho.



  • siddiqi73@

    Bhai jaan, agar koi shakas maila ho ya ghaleez es se koi faraq nein parta. Daikhna yeh ha keh woh kia keh raha ha. Agar sach keh raha ha tao phir us ko zaroor parah jana chaye aur us kee tareef kee jani chaye.

    Mein Aksar Hasan Nisar kee intaha pasandana soch se agree nein hota. Laken agar woh taareekhi haqaiq bata raha ha, tao phir en ko tasleem karana aur us kee shabash daina zaruri ha.



  • WAh shah ji

    App ka husNe bayan. Baron baron ko aap ne chop kra diya!



  • asif65@

    Brother, en Noon leaguer ko har koi chup karwa sakta ha. Woh es liay, keh, Jhoot aur munafqat par mubani siyasat/propaganda kee koi bunyaad nein hoti.

    Laken abi tak enain khula maidaan mila huwa ha. aur yeh khudfrabi mein mubtala ho kar dundanatay phir rahay hein. Joon joon election nazdeek aaiaan gay, Noon league aur es kee leadership expose hoti jaay gee.



  • شاہ جی ۔

    اپ نے بلکل درست فرمایا ۔ خود تو یہ گندگی کے ڈحیر ہیں اور دوسروں پر حدیں لگاتے پھرتے ہیں ۔



  • Yeh kiya chichoora pun ho raha hai, Shahji and Asif Bhai?! Siddiqi Bhai thori dair kay liya kiya chalay gai, aap logon nay zabardasti forum apnay pass rakh liya.



  • siddiqi73@

    Es mein chichorapun wali kon see baat ha.

    Please aik baat mujay bataain, keh , Noon league ne total kitanay log internet par propaganda ke liay hire kar rakhay hein? Aur har aik ke paas kitani kitani ids hein?

    Aap logoon ne Media cell Lahore ke kon se area mein qaim kar rakha ha? Punjab govrnment kul kitani payment kar rahi ha?



  • @Shahji,

    Na tu Punjab Hakumat Zardari hai ju tax kay paisay say hur cheez khareed lay aur na hee him Asfandyar Wali aur MQM hain ju paisay par bik jai :D

    PML-N ka media cell hai ya nahi, I have absolutely no clue. All I know is that I'm doing this pro-bono and so are the rest of the posters in their own individual capacity.



  • siddiqi73@

    somebody who knows personally about this media cell, confirmed me about this, How you can deny this?



  • @Shahji,

    Now its up to you whatever you want to believe. In today's day and age, the political battle for supremacy is fought on the electronic and print media; more so than being out on the field. For this purpose, political parties need effective and vibrant Social Media Teams to further their agenda and gain superiority on one and another.



  • lassan phitkar in action; is ki issi baton ki wajah se is ke chahra pe itna noor ha



  • siddiqi73@

    I believe, Internet propaganda has very limited direct effect on Pakistani public. Because very limited peoples are using internet in Pakistan. Specially in rural area it does not have any direct influence.

    But may be little more effective in urban youths. That is why PTI and Noon league is more active on internet fight. This internet propaganda can impress electronic and print media. Then, this media can play key role in next election.

    PPP does not have much focus in urban areas. They have limited youth support and even that youth is not very active and motivated, because PPP is already in Power. May be they will be little more active when election campaign start.



  • @Shahji,

    Mark my words, urbanite Pakistan would play a key role in next elections. PPP is doing itself a huge disservice by ignoring such a massive and critical vote bank which traditionally shies away from visiting the polling booths on election day. But this time around, they will be pulled out of their comfort zones and have their voices heard. Read this by Cyril Almeida:

    http://www.dawn.com/2012/04/01/the-ppps-urban-problem.html



  • صدیقی بھائی کیا ہوا ؟ اچانک پی پی پی والوں سے اتنی ہمداردی ؟ اپ اپنی فکر کریں

    اپکے عابد شیر علی فرما رہے ہیں ۔ پڑھے لکھے نوجوان ہمیں وٹ نہیں دیتے تو نہ دیں ایسے بہت سے ان پڑھ اور غریب لوگ ہیں جن کے پاوں میں جتیاں نہیں ہیں وہ ہمیں وٹ دیں گیں ۔

    اسی لیے بھٹو زاردای خاندان اور شریف خاندان تعلیم پر خرچ نہیں کرتیں کیونکہ اگر سب پڑھے لکھے اور تعلیم ہافتہ بن گئے تو ان کو کوئی وٹ نہیں دے گا۔

    لیکن بھٹو زاردای خاندان اور شریف خاندان یہ بھول رہے ہیں کہ صرف تعلیم یافتہ لوگ ہی ان کے خلاف نہیں بلکہ ساری عوام ان سے تنگ ائی ہوئی ہے ۔ غریب بھی اور امیر بھی ۔ ان پڑھ بھی اور پڑھا لکھا بھی ۔



  • @Asif Ji,

    Hamay tu khalq-e-khuda kee tamam makhlooqat say humdardi hai; unsay bhee ju apna muun kholtay hee logon par Ilzam lagatay hain. Rah gai fiqar karnay ki baat....tu bhai yeh mulk ab two party system hee rah ga; PPP and PML-N. Kisi 3rd option ka koi chance bunta dikhai nahi day raha. Aap kay leader nay tu boycott karna hai aur agar nahi kiya tu zamanat zabt karwai ga pooray Pakistan say.