A Pulitzer Prize in Pakistan



  • http://newsexcuse.blogspot.com/2012/04/blog-post_17.html

    نیوز ایکسکیوز کو بہترین بلاگ کا پلٹزر پرائز دینے کا فیصلہ ہوچکا تھا، بس اعلان کرنے کی دیر تھی کہ نیویارک ٹائمز والے ہاتھ باندھے آن کھڑے ہوئے۔

    پوچھا کیا مسئلہ ہے؟

    کہنے لگے، اس بار ہمارے حق میں انعام سے دست بردار ہو جائیں، ساری عمر دعائیں دیں گے۔ جب ذرا انکار کیا، تو آنکھوں میں آنسو بھر آئے (ان کی)۔ فریاد کی (انہوں نے) کہ نیوزایکسکیوز کیلیے انعام لینا کوئی نئی بات نہیں، البتہ ان کے ادارے کی عزت و وقار کا مسئلہ ہے۔

    جب انہوں نے اپنی بہتی آنکھوں کے آگے بند باندھنے کیلیے ہمارے ٹیشوپیپراستعمال کرنے شروع کر دیے تو ہمارا دل فوراً پسیج گیا۔

    اس سے پہلے کہ ٹیشو کا ڈبہ بالکل ہی خالی ہو جاتا، ہم پلٹزر والوں کو فون کر چکے تھے کہ بھائی اس بار ہمارا انعام نیویارک ٹائمز والوں کو دے دو! ایسے ہی موقعے کیلیے شاعر نے کیا خوب کہا ہے

    ع۔ توں لنگھ جا، ساڈی خیر اے