تعلیم کا مقصد اچھا انسان بننا ہے یا لاکھ پتی ۔ کروڑپتی بننا؟



  • میرے زھن میں چند سوالات پیدا ہوئے ہیں جو دوستوں کے ساتھ شیر کرنا چاھتا ہوں ْ

    تعلیم کا مقصد اچھا انسان بننا ہے یا لاکھ پتی ۔ کروڑپتی بننا؟

    جیسے جانور مختلف قسم کے ہوتے ہیں اسی طرح انسان بھی چار قسم کے ہوتے ہیں

    فرشتہ صفت انسان ۔ ہر وقت دوسرں کی بھلائی اور بہتری کی فکر کرتا ہے ۔

    جانور صفت انسان تین قسم کے ہو سکتے ہیں ۔

    گھاس خور جانور کی قسم کے ۔ یہ وہ قسم ہے جو کسی کا نقصان کیے بغیر اپنا پیٹ بھرتے ہیں ۔ بکری ۔ ہاتھی وغیرہ

    ایسا انسان خودغرض تو ہوتا ہے لیکن اپنے کام سے کام رکھتا ہے ۔

    گوشت خور جانور کی قسم کے ۔ یہ وہ قسم ہے جو دوسرے کا نقصان کر کر اپنا پیٹ بھرتے ہیں ۔ شیر ۔ چیتا وغیرہ

    ایسا انسان نہ صرف خودغرض ہوتا ہے بلکہ اپنے فائدے کے لیے دوسروں کو نقصان پہنچاتا ہے ۔

    زھریلا جانور کی قسم کے ۔ یہ وہ قسم ہے جو دوسرے کو نقصان دیتے ہیں حالنکہ اس میں ان کا کوئی فائدہ نہیں ۔ سانپ ۔ بچھو وغیرہ

    ایسا انسان نہ صرف خودغرض ہوتا ہے بلکہ اپنا فائدہ ہو نہ ہو دوسرے کو نقصان پہنچاتا ہے ۔

    اب سوال پیدا ہوتا ہے کے ہمارے تعلیمی ادارے فرشتہ صفت انسان پیدا کر رہے ہیں یا جانور صفت ؟

    اگر جانور صفت تو پھر کس قسم کا جانور؟



  • Primary goal is to enable awam to become a good and productive citizen and a very important part of becoming a good citizen is to contribute towards its economy along with civic sense.

    A coup,e of years ago i was writing a research report and found thatit was either MIT or harvard, cant remember which one, had stated goal of their undergraduate program to ensure their students get a highly rewarding job in the industry.

    I disagree with the notion that goal of taleem is to make individual a better person without necessarily enabling him/ her to earn a decent livng. This is almost same as teaching someone how to fight and then pushing him in a battle empty handed.



  • اچھا انسان کیا ہوتا ہےیا کون ہوتا ہے، تعلیم کیا ہوتی ہے، علم کیا ہوتا ہے. پہلے ان باتوں پر اتفاق راۓ ہو جائے پھر آگے سوچیں گے



  • قصر بھائی ۔ چونکہ فارغ جذباتی بھائی نے ایک اور جگہ اپکے چند سوالات کا جواب دیا ہے لہاذا میں ان کے جواب کا ایک حصہ یہاں پوسٹ کرتا ہوں ۔ امید ہے انکو اس پر کوئی اعتراض نہیں ہوگا۔

    سائنسی معلومات چاہے وہ انسانی ساخت کے متعلق ہوں یا ادویات کے متعلق، چاہے وہ کائنات کے ابتک چھپے ہوۓ اسراروں سے متعلق ہوں یا مادے کی کیمیائی خصوصیات کے متعلق ہوں ، چاہے وہ مادے کی طبعی خصوصیات سے متعلق ہوں یا بشریات کے متعلق معلومات کا اکٹھا کرنا ہو ، یہ سب فنون میں شمار ہوتے ہیں اور انکا "علم " سے تعلق نہیں ہے . علم اپنے آپ سے اپنے وجود کی تخلیق سے ، کائنات کی غرض و غایت سے ، انسانوں کے انسانوں کے ساتھ تعلقات اور انکے اپنے خالق و مالک کے ساتھ تعلقات سے ہے ، علم کا تعلق انسان کائنات ، اور زندگی کے بارے میں جاننے ، ان کے باہمی تعلقات ، ان سب سے [پہلے کیا تھا اور ان سب کے بعد کیا ہوگا کو جاننے سے ہے

    علم کا تعلق ایک اچھا انسان بننے سے ہے ، ایک ایسا انسان جو انسانیت کی فلاح پر یقین رکھتا ہو اور جو اپنے اعمال و افعال کی جوابدہی پر یقین رکھتا ہو اور اس کا عملی مظھر ہو

    کیا مغربی "تعلیم" اس طرح کی ذہنیت پیدا کر سکتی ہے ، میرا نہیں خیال

    ہمیں اس بات کو بھی نئے سرے سے جاننے کی ضرورت ہے کہ اسلام کسطرح اسرار قدرت کا کھوج لگانے کی نا صرف دعوت دیتا ہے بلکہ اسکا انسانوں سے تقاضا کرتا ہے ، ہمیں اس مغربی فکر اور سوچ سے باھر نکل کر "علم " کی تحصیل کرنی ہو گی کہ اسلام پر چلنے کا مطلب شائد فنون کی تحصیل سے مونہہ موڑنا ہے

    میرے نزدیک وہ پوسٹ ڈاکٹریٹ جو اپنے آپ سے آگاہ نہیں ہے اور ایک اچھا انسان نہیں ہے اس میں اور جانور میں کوئی فرق نہیں ہے

    حصول علم اور حصول فنون کے فلسفے کو ایک نئی روشنی میں دیکھنے کی ضرورت ہے اور ایک نئی غیر غلامانہ ذہنیت کے ساتھ جاننے کی ضرورت ہے

    ف ج

    Faarigh Jazbati



  • Fj sahab,

    You are pointing towards pure and applied sciences. Both are valid branches of knowledge.



  • It is a good topic but it is difficult not to get in the realm of "Faith and Religion".

    There is difference between "Taleem" and "Ilm".

    Taleem is given while Ilm is acquired.

    To acquire Ilm, it is necessary to have an urging desire to open doors of unknown to find causes of the effects being observed. Every Ilm can lead to better understanding of "Ultimate Cause".

    Taleem is imparted to share what is already known to bring human being to a basic level, which can be used to benefit others.

    It is upto the persons how they use Taleem imparted to them and what degree of desire they have to acquire Ilm.

    Purpose is defined by individuals based on what is their "belief system".



  • Teachers boycott exams amid Principal gets beaten by students

    By: Zuhaeb Nazir, Uploaded: 9th May 2012

    KARACHI: The students of National College Bahadurabad, Karachi, in a condemning act, thrashed the Principal of their college after they were held back from cheating.

    The disgraceful act was committed on Wednesday when numerous outsiders forcefully entered the college after students had been stopped from cheating.

    According to reports, the outsiders belonged to different political parties, and were seen beating and thrashing the teachers and the college furniture respectively.

    The troublemakers even threatened the staff of the college with respect to not allowing the students to cheat.

    As a result of the action, the teachers boycotted the commerce exam to be conducted on Wednesday afternoon.

    The teachers, during their protests, demanded for proper security in such conditions.



  • "The disgraceful act was committed on Wednesday when numerous outsiders forcefully entered the college after students had been stopped from cheating."

    Why the elder generation taking "right" of corruption/cheating from youth? Don't they want next generation to exceed their elders in corruption.



  • جہاں آوے کا آوا ہی بگڑا ہوا ہو ،جہاں کرپشن ، بھتہ خوری چندہ خوری کوئی برائی ہی نہ سمجھی جائے وہاں یہی کچھ ہو گا



  • this is a disgraceful act and should be condoned to the highest order. I am not for violence but when required sometimes it is needed. Students should have got together and kicked these outsiders backs.



  • @Respect

    "should be condoned to the highest order"

    I think you meant to say condemned not condoned.



  • Shameful and sad.

    Qaum kaa zawal aur qaum ka urooj kisi aik shoobay mein nahi balkay hurr shobay mein aik saath aata hai.



  • اگر ہمارے تعلیمی اداروں کا یہ حال ہو گا تو پھر وہاں سے جانور صفت انسان ۔ جن کی زندگی کا واحد مقصد ہر حال میں لاکھ پتی ۔ کروڑپتی بننا ہے ۔ ہی پیدا ہونگے ۔



  • @asif65

    Real problem starts from home.

    When father and mother will be busy in enjoying their personal life and do not perform their due diligence of imparting islamic value system and "Tarbeat" of their children, even the best of education system will not be much more sucessful.

    Taleem and Tarbeat go hand in hand.



  • Probably a relevant article on the topic,,,,

    ڈی ڈبلیو کی چیف ایڈیٹر اوٹے شیفر کے مطابق تعلیم کا مطلب حصول علم سے بھی کچھ زیادہ ہے۔ تعلیم سے نہ صرف شخصیت میں نکھار پیدا ہوتا ہے بلکہ یہ انسان کو سیاسی طور پر بھی سرگرم رکھتی ہے۔

    اور یہ بات ہمیشہ حکمرانوں کے مفاد میں نہیں رہی۔ علم طاقت ہے۔ یہ نظریہ چار صدیاں پرانا ہے۔

    http://www.dw.de/dw/article/0,,15937156,00.html?maca=urd-rss-urd-all-1497-rdf