جرمنی - پیغمبر اسلام کے خاکوں کی عدالت کی جانب سے اجازت



  • جرمنی کے دارالحکومت برلن میں ایک عدالت نے دائیں بازو کے ایک گروہ کو پیغمبرِ اسلام کے متنازع خاکوں پر مبنی پلے کارڈ بنانے کی اجازت دے دی ہے۔

    ’پرو ڈوایچ لینڈ‘ نامی یہ گروہ آئندہ اختتامِ ہفتہ پر برلن کی مساجد کے باہر مظاہرہ کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔ گروہ کا کہنا تھا کہ ان کے مظاہروں کا عنوان ’اسلام کا تعلق جرمنی سے نہیں، اسلامائی زیشن روکو‘ ہوگا۔

    پیغمبرِ اسلام کے یہ بارہ متنازع خاکے سنہ دو ہزار پانچ میں ڈنمارک میں ایک اخبار میں شائع ہوئے تھے جن کے نتیجے میں دنیا بھر میں احتجاجی مظاہرے ہوئے تھے۔

    اسلامی قوانین کے مطابق پیغمبرِ اسلام کی تصاویر یا عکس بنانا منع ہے۔

    بی بی سی کے نامہ نگار ظہیر الدین بابر نے جرمنی میں مقیم صحافی عشرت معین سے اس معاملے میں سوالات کیے تو ان کا کہنا تھا کہ جرمنی میں مسلمانوں کو ہراساں کیا جا رہا ہے۔

    انہوں نے بتایا کہ اس گروہ نے برلن کی مختلف مساجد میں تخریبی کارروائیاں بھی کیں ہیں اور ان کے باہر ’سواشٹکا‘ یعنی نازی نشان بھی بنایا ہے۔

    عدالت نے برلن کی تین مساجد کے منتظمین کی جانب سے دائر کی گئی درخواست کومسترد کر دیا۔ درخواست میں عدالت سے کہا گیا تھا کہ وہ سنیچر کو ہونے والے ’پرو ڈوایچ لینڈ‘ کے مظاہروں میں پیغمبرِ اسلام کے خاکوں کے استعمال کو روکے۔

    عدالت کا کہنا تھا کہ یہ خاکے اظہارِ فن کی آزادی کے زمرے میں آتے ہیں اور انہیں قانونی طور پر کسی مذہبی گروہ کی

    عدالت کا کہنا تھا کہ پیغمبرِ اسلام کے خاکے دیکھانا کسی گروہ کے خلاف نفرت یا تشدد نہیں مانا جا سکتا۔

    ادھر پولیس برلن میں ہونے والے احتجاجی مظاہروں میں شدید کشیدگی اور تشدد کے واقعات کو روکنے کی تیاری کر رہی ہے۔

    http://www.bbc.co.uk/urdu/world/2012/08/120817_germany_caricatures_sa.shtml



  • these so called German and other European champions of human civilization don't even know that just on the name of protecting the rights of a few hundred hardline hatred creator christians or jews they are hurting the basic rights of millions of muslims ?????......... aik taraf toh peace ki batain kurtai nai thuktai aor dosri taraf khud hi logon ko mushtail kurnai kai saaamaan paida kurtai hein ......kaash keh inn kafiron ko pata hota keh Hazrat Muhammad SallaLLahO Alihiwasalam tamam duniya kai liye rehmat ban kai aye,..

    aaj ka muslmaan kamzoor sai ......... duniya ki galazto mein dobai howai sai ...... laikin woh apnai NABI SallallahoAlihiwassalam kai bara mein bohat hassaas hein aor maghrib kai hukmrano ko iss bara mein sochna chahiye keh woh utni hi nafrat paida kurain jitni keh woh sambhal sukain ..........

    baaad iz Khuda buzurrug Tui Qissa mukhtassar

    Muhammad(PBUH) ki muhabbat emaan ki shart e awal hai

    ho issi mein agar khaami toh eemaan namukkammal hai

    toh germans aor har koi samjh lai keh woh apni kisi bhi harkat se muslmanoo kai dil se un kai Akaa Nabi Akram sallahoalhiwassalam ki mohabat ko khurch toh nai suktai but iss tara kai waqaiat se woh apnai liye nafrat create kur rhai hein ........