کامرہ ایئر بیس حملے کا ماسٹر مائنڈ گرفتار



  • سیکورٹی ذرائع کے مطابق کامرہ ایئر بیس کے حملے کے ماسٹر مائنڈ اقبال نامی شخص کو لاہور سے گرفتار کیا گیا ہے۔

    ذرائع نے بتایا کہ اسی شخص نے کامرہ بیس حملے پر اٹھنے والے تمام اخراجات برداشت کیے تھے۔

    مصدقہ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایک روز قبل کنڈ کے علاقے سے گرفتار ہونے والے تجمل نامی شخص نے حملہ آوروں کو پناہ دی تھی جبکہ تجمل کے قریبی رشتے دار محمد شہباز جس نے اس حملے کیلیے ریکی کی تھی، اس کو بھی گرفتار کرلیا گیا ہے۔

    قبل ازیں کامرہ ایئربیس پر خود کش حملہ کرنے والے حملہ آور فیصل شہزاد کے دو بھائیوں سمیت سولہ افراد کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

    اٹک منہاس ایئربیس پر خودکش حملہ کرنے والے فیصل شہزاد کا تعلق ٹیکسلا سے تھا اور اس کے دونوں بھائیوں کو بھی ٹیکسلا کے علاقے سے گرفتار کیا گیا ہے۔

    فیصل شہزاد کے موبائل فون سم کے ڈیٹا کی مدد سے اس کے بھائیوں کے علاوہ مزید چودہ افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔

    ان افراد کو ٹیکسلا، چکوال، واہ فیکٹری، حضرو اور اٹک کے علاقوں سے حراست

    http://urdu.dawn.com/2012/08/19/kamra-airbase-attack-master-mind-arrested/

    All arrested seem to be Punjabis. How come we are told these attacks are in retaliation to drone attacks in North Waziristan? How many Punjabis live in North Waziristan?



  • ^^^ Many



  • They are arresting due to mobile record . It will take time to know truth .