Is it Extremism all the way?



  • Question for Those who oppose secularism,

    1. How intolerance can b eliminate?

    2. How sectarianism and brain-washing can b eliminate?

    3. Is religious study more important thn Modern and Science study?

    4 Is a intelligent religious philosopher more important thn a scientist.

    5 Who better served Pakistan,, Scientists and engineers or religious clerics like Tahir Qadri and Hafiz Saeed

    6 Would it not better if all religious philosopher would b scientists, doctors or engineers, remember western countries have many times greater thn Pakistan

    7 Y all religious fundamental countries r involved in nepotism, dynastic and corrupt GOVT system i.e Iraq,Syria, Libya, Sudan, etc but on other hand secular country like Turkey r more developed.. and Turkey has more influence on western countries on Israel issue

    In secular society Religious can b more harmonized thn in extremist, intolerance and sectarianism society like Pakistan...

    and

    Being a Religious Country Is Pakistan not involved in heinous non-Islamic evils like Alcoholism, adultery, women's exploitation, raping etc etc



  • Cheema430 sahib

    You have asked a good question as to how can intolerance be eliminated`.

    I guess one way could be by eliminating the reasons that breed intolerance. I think ina just and fair society there is little intolerance.

    In my opinion opportunists have exploited the unfairness in our society for their own ulterior motive which has resulted in intolerance.

    The intolerance that we see is not in terms of religion but it is evident in all walks of life.



  • I think this video lecture of Sam Richards worth an hour of our life to understand what is going on in real.Please share ur thoughts after watching.It may deserve a separate thread but somehow connected with this one too.

    Christian Invaders FULL LECTURE Sam Richards

    http://www.youtube.com/watch?v=KgH_D98cJPU



  • I generally dont take things too seriously but this time I am greatly offended by comment.

    محترم ہپوکریئیٹ صاحب۔۔۔۔۔۔

    جب سے سلالہ والا واقعہ ہوا ہے تب سے ہماری غیرت مند اینکر بریگیڈ نے پوری قوم کو دو الفاظ کی کھال کھینچنے میں لگا دیا۔۔۔۔۔۔ معذرت اور معافی۔۔۔۔۔۔ میں بھی اسی معاملہ کی لہروں میں بہتے ہوئے آپ سے معذرت کرتا ہوں کہ آپ کو میرے الفاظ برے لگے۔۔۔۔۔۔ لیکن ساتھ ساتھ میں الفاظ پر قائم ہوں۔۔۔۔۔۔ ایک ترک لکھنے والے، اورہان پامُک جسے آرمینیائی باشندوں کی نسل کشی کے اوپر لکھنے کے سلسلے میں اپنے ملک سے فرار ہونا پڑا تھا، نے ایک بڑا خوبصورت جملہ لکھا تھا۔۔۔۔۔۔

    'I stand by my words. And even more, I stand by my right to say them...'

    پچھلے سال سے میں آپ سے ایک سوال پوچھ رہا ہوں کہ توہین یا تضحیک کی کیا تعریف ہوتی ہے۔۔۔۔۔۔ میں نے آپ کو مثالیں بھی دیں کہ پاکستان میں ہی کچھ لوگ ہیں جو کدو کو کدو شریف کہنے اور کہلوانے پر اصرار کرتے ہیں کہ نبی کی پسندیدہ سبزی تھی۔۔۔۔۔۔ باقاعدہ ابتدائی اسلام کے ایک واقعہ کا حوالہ دیتے ہیں کہ کسی صحابی کو کدو یا کدو شریف پسند نہیں تھا تو کھانے کے وقت ان صحابی پر دوسرے صحابہ نے تلواریں تان لی تھیں۔۔۔۔۔۔ کیونکہ ان صحابہ کی نظر میں اگر کسی کو کدو شریف پسند نہیں تھا تو یہ ناپسندیدگی توہین کے زُمرے میں آتی تھی۔۔۔۔۔۔

    ابھی پچھلے ایک تھریڈ پر میں نے ایک سُنتِ نبوی کا حوالہ دیا تھا کہ آج اس پر پولیس کیس بن جاتا ہے۔۔۔۔۔۔ آپ وہ پورا تھریڈ جا کر پڑھ لیں۔۔۔۔۔۔ میں نے ایک لفظ کسی شخصیت کے خلاف نہیں لکھا تھا صرف ایک ایسے واقعہ، جس کی مومنین کی ہی معتبر احادیث کی کُتب سے سند ملتی ہے، کا ایک واقعہ کے طور پر ہی ذکر کیا تھا۔۔۔۔۔۔ آپ مومنین کا ردِ عمل جاکر پڑھ لیں کہ میں نے یہ واقعہ اٹھا کر پتا نہیں کس قسم کی توہین کردی ہے۔۔۔۔۔۔ پتا نہیں کتنوں کے جذبات مجروح ہوگئے۔۔۔۔۔۔ کم بخت یہ بھی نہیں جانتے کہ میں ان ٹٹوؤں کے جذبات سے نہیں بلکہ ان کے بھوسے بھرے دماغوں سے کھیلتا ہوں۔۔۔۔۔۔

    آپ سے دلی لگی چلتی رہے گی۔۔۔۔۔۔ باقی یحییٰ صاحب کی تحریر میں آپ کیلئے نِشانیاں ہیں۔۔۔۔۔۔

    اتنے مانوس صیّاد سے ہو گئے۔۔۔۔۔۔ اب رہائی ملے گی تو مَر جائیں گے۔۔۔۔۔۔

    :-) :-) :-)



  • شیپ صاحب

    اس بات سے قطع نظر کہ آپ اور بخاری صاحب ٹھیک کہہ رہے ہیں، صرف بحث کی غرض سے کیا ہیپو کریٹ صاحب کے دوسرے اور تیسرے نکتہ (آج کے پہلے کومنٹ میں) کی کوئی جوابی دلیل ہو سکتی ہے



  • اوساکا بوایے صاحب

    ویڈیو کا شکریہ، کمال کی بات ہے کہ ہمارے لئے بھی وہی سوچتے ہیں

    ایسا لگتا ہے طاقتور کی بڑی سے بڑی غلطی جس میں حتکہ ہزاروں لاکھوں انسان متاثر ہوں کا بھی احتساب بس اتنا ہے کہ شائد وہ اگلی دفعہ حکومت میں نہ آ سکے

    اورجواب میں ایک زیادہ جنرل اور دلچسپ ویڈیو بھی پیش ہے، کسی حصے حتکہ ساری سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے

    http://www.youtube.com/watch?v=Xbp6umQT58A



  • ایزی گو بھائی جی سلام

    انتہا پسندی کی ایک علامت جو کہہ انتہا پسندی میں مبتلا لوگ اکثر نظر انداز کر دیتے ہیں وہ خود پسندی ہوتی ہے

    اس خود پسندی کا اظہار مختلف شکلوں ، صورتوں ، عادتوں ، علامتوں اور تحریروں میں ہوتا ہے ، کچھ مثالیں پیش خدمت ہیں ذیل میں

    میں یہ اکثر کہتا ہوں

    میرا یہ کہنا ہے

    میں اس کا پہلے ہی حوالہ دے چکا ہوں

    میں نے اس کا کی دفعہ حوالہ دیا ہے

    میں اکثر یہ سوال پوچھتا ہوں

    میں نے اکثر اس کی مثال دی ہے

    میں نے کبھی کسی کے خلاف کچھ نہیں کہا

    میں نے کبھی کسی کی توہین نہیں کی

    میں دوسروں کے ساتھ یہ کرتا ہوں

    بلا شبہ میں اکثر یہ لکھتا رہتا ہوں

    میں آپ کی بات کو پوری طرح سمجھتا ہوں لیکن آپ میری بات کو نہیں سمجھتے یا سمجھ سکتے

    دوسرے الفاظ میں آپ کو تحریر ، تقریر ، گفتگو میں ، میں میں میں کی تکرار اس شدت سے دکھائی ، سنائی اور پڑھائی دے گی کہ شدت پسندی کے سوا اور کچھ سجھائی نہیں دے گا

    آئندہ جب آپ لوگوں کی تحریریں پڑھا کریں تو اسطرح کے فقرات کو بھی دیکھا کیجئے گا ، خوب لطف آئے گا اور انتہا پسندی کا مفہوم بھی سمجھ میں آ جائے گا

    جیسے طعنہ دیا جاتا ہے کہ کچھ لوگوں کے پیٹ میں داڑھی ہے تو بعینہ اسی طرح کچھ لوگوں کے پیٹ میں انتہا پسندی ہوتی ہے لیکن اس کو بڑی مشکل سے چھپا پاتے ہیں اور ہمیشہ ایسے ظاہر کرتے ہیں کہ وہ تو انتہا پسندی اور شدت پسندی کے سخت خلاف ہیں لیکن ان کے پیٹ میں کسی بھی لمبی سے لمبی داڑھی سے بڑی انتہا پسندی چھپی ہوتی ہے

    ف ج



  • @Hypocrite Saab

    M Bukhari saab is arguing beliefs ought not to be respected. You respect everyone's BS here under the banner of faith. Bukhari Saab have every right to complain ...

    یا رب وہ نہ سمجھیں ہیں نہ سمجھیں گے میری بات

    دے اور دل ان کو جو نہ دے مجھ کو زباں اور

    :)



  • سمجھ نہیں آتی کہ ایم بخاری کو مبارک باد دوں یا افسوس کروں کہ ان کو ایک مقلد ملا پر تو وہ بھی کالا بھیڑ نکلا

    :-)



  • ایزی گو صاحب۔۔۔۔۔۔

    آپ کی بھی نقطہ اٹھانے اور چَسکے لینے کی عادت نہیں جائے گی۔۔۔۔۔۔

    میری نظر میں ایم بخاری کی وہ تحریر واقعی عمدہ ہے اور اس میں بہت زبردست نکات اٹھائے گئے ہیں۔۔۔۔۔۔ لیکن ساتھ ساتھ یہ قطعاً ضروری نہیں ہر کوئی محترم ہپوکریئیٹ صاحب سمیت اس سے اتفاق کریں۔۔۔۔۔۔ اختلاف کرنا یا تائید کرنا ان کا حق ہے۔۔۔۔۔۔ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ ایم بخاری اس ویب سائٹ کے نہ صرف ایک نہایت عمدہ لکھاری ہیں(تھے) بلکہ خالی لفافوں کی شاندار اور تباہ کُن قسم کی برقی بلکہ تھرمو نیوکلیئر چھترول میں بھی مہارت رکھتے ہیں لیکن میرے نزدیک یہ بات زیادہ اہمیت نہیں رکھتی کہ لکھنے والا کون ہے۔۔۔۔۔۔ اصل اہمیت تحریر کی ہوتی ہے۔۔۔۔۔۔ ایک بحث میں فریقین اپنے موقف کو سمجھانے کیلئے یا اس کو مضبوط کرنے کیلئے مختلف لوگوں کی تحریریں بھی پیش کرتے رہتے ہیں۔۔۔۔۔۔ لیکن اصل اہمیت تحریر میں اٹھائے گئے نکات کی ہی ہوتی ہے۔۔۔۔۔۔

    اب جہاں تک محترم ہپوکریئیٹ صاحب کی بات ہے تو وہ بھی اپنی فطرت و عادت سے مجبور ہیں۔۔۔۔۔۔ بلکہ صرف ہپوکریئیٹ صاحب ہی نہیں میرا آج کے پاکستانی معاشرے میں اقلیتوں کے بارے میں ایسا ہی مشاہدہ ہے جو کہ غلط بھی ہوسکتا ہے۔۔۔۔۔۔ اب ان لوگوں کی ایسی عادت کیسے بن گئی ہے۔۔۔۔۔۔ یہ ہمارے معاشرے کیلئے ایک سوال ہے۔۔۔۔۔۔

    کُج شہر دے لوک وی ظالم سَن۔۔۔۔۔۔ کُج سانوں مرن دا شوق وی سی۔۔۔۔۔۔

    :-) ;-) :-)



  • Just like I have respect fro everyone on this forum I have respect for Yahya sahib and Black Sheep sahib also.

    .

    .

    ذاتی حملوں کے جواب میں اس سے بہتر برقی چھترول کوئی کر ہی نہیں سکتا - کوئی غیرت مند ہوگا تو اپنے منہ پر یہ سولہ نمبر کا چھتر ساری عمر محسوس کرتا رہے گا

    کوئی انتہائی بے غیرت اور غلیظ قسم کا کوڑھی ہو تو اور بات ہے

    ^^^^^^^ :wink: :wink: ^^^^^^^



  • ہر انسان ہی کسی نہ کسی ہستی یا ذات کی تعظیم بجا لاتا ہے لیکن اس کا ادراک نہیں کرتا

    کوئی اپنے ہی جیسے دوسرے انسان کی عظمت سے مرعوب ہو کر اس کی باتیں دہراتا ہے اس کی شان میں قصیدہ گوئی کرتا ہے تو کوئی خالق باری تعالیٰ کی عظمت بیان کرتا ہے



  • اقی یحییٰ صاحب کی تحریر میں آپ کیلئے نِشانیاں ہیں۔۔

    پنی فطرت و عادت سے مجبور ہیں۔


    محترم بلیک شیپ صاحب

    مجھے تو لگتا ہے کے ہم سب اپنی اپنی فطرت اور عادت سے مجبور ہیں

    باقی نشانیاں تو ضرور ہیں یحییٰ صاحب کی تحریر میں اور میں نے اپنی محدود کوشش کی ہے ان نشانیوں کو سمھجنے کی . اکثر ہر ایک کے لیے کچھ نشانیاں ہوتی ہیں دوسروں کی تحریر میں

    آپکی ذہانت کا میں بہت بڑا مداح ہوں میں

    کوشش کیجیے کے آپ اپنی ذہانت کو سب سے افضل نہ سمھجنے لگیں

    بڑے بھائی کا مشورہ ذرا غور کیجے گا اگر دل چاھے حضور کا



  • I stand by my words. And even more, I stand by my right to say them...'

    پچھلے سال سے میں آپ سے ایک سوال پوچھ رہا ہوں کہ


    محترم بلیک شیپ صاحب

    میں آپ کی بات کہنے کے حق پر پورا یقین رکھتا ہوں

    اور آپ کو بات کرنی چاہیے

    اور ہر ایک کو بات کرنی چاہیے

    میرا عقیدہ ہے کے بات شاید اتنی بری نہ لگے جتنا بات کرنے کا انداز

    ویسے جب آپ بات کرتے ہیں تو گالی گلوچ پر کیوں نہیں اترتے

    کیا کسی کو گالی دینا بری بات ہے

    اور اگر ہے تو کیوں ہے



  • انتہا پسندی کی ایک علامت جو کہہ انتہا پسندی میں مبتلا لوگ اکثر نظر انداز کر دیتے ہیں وہ خود پسندی ہوتی ہے

    .

    .

    .

    فارغ جذباتی صاحب، واعلیکم السلام

    آپکا مشاہدہ اور نتائج مجھے درست لگ رہے ہیں اور بقول ہیپو کریٹ صاحب خود پر اپلائی کرنے کی تھوڑی بہت کوشش بھی ہوگی، کسی اورکو کہنا مشکل ہے، سچی بات یہ ہے کہ یہاں سب کا علم، سمجھ و ایکسپوزر مجھے اپنے سے زیادہ لگتا ہے، ہاں البتہ کبھی کبھی یہ سوچ ضرور آتی ہے کہ کوئی جو کہہ/کر رہا ہے اسکی وجہ کیا ہو سکتی ہے



  • شیپ صاحب

    میرے خیال میں مذہب کو نہ ماننے والے کو مذہب کی کتابوں سے دلیلیں دے کر قائل کرنا غیر منطقی اور مشکل ہے

    اسی طرح مذہب کے ماننے والوں کو بات سمجھانے کے لئے شروعات مذہب چھڑوانے سے کرنا بھی بالکل غیر حقیقی لگتا ہے

    مذہبی پیغام (آپکے بقول فلسفہ) ہو یا برنارڈ رسل کا فلسفہ دونوں پراوپن مائنڈ کے ساتھ غور کرنا چاہیے

    میرے نزدیک یہ بات زیادہ اہمیت نہیں رکھتی کہ لکھنے والا کون ہے۔۔۔۔۔۔ اصل اہمیت تحریر کی ہوتی ہے

    مجھے ادبی قسم کی انگریزی آسانی سے سمجھ نہیں آتی اور یقین نہیں ہے کہ بخاری صاحب یہاں وہی کہہ رہے ہیں جو میں سمجھ رہا ہوں

    I shy away from saying what I suspect to be true because, precisely, I ‘suspect’ and I am not convinced. What am I not convinced by and suspect to be true? Outright atheism.

    بہتر لائحۂ عمل یہی لگتا ہے کہ کسی کو زیر کرنے، علاج کرنے یا فورم سے دوڑانے کی بجایے ڈائلاگ جاری رہے، ایم بخاری، جانو جرمن، ایف ایم کے، ضیاء ایم وغیرہ کی گفتگو میں یہ پہلو بھی محسوس کیا جا سکتا ہے



  • آپکی ذہانت کا میں بہت بڑا مداح ہوں میں

    کوشش کیجیے کے آپ اپنی ذہانت کو سب سے افضل نہ سمھجنے لگیں

    بڑے بھائی کا مشورہ ذرا غور کیجے گا اگر دل چاھے حضور کا

    محترم ہپوکریئیٹ صاحب۔۔۔۔۔۔

    آپ کا مشورہ سر آنکھوں پر۔۔۔۔۔۔ آپ اس ویب سائٹ کے ان چند گنے چنے حضرات میں سے ہیں جن کا میں دِل سے احترام کرتا ہوں۔۔۔۔۔۔ کیوں کرتا ہوں۔۔۔۔۔۔ اس کی وجہ میرے نزدیک انسانی فطرت ہے۔۔۔۔۔۔ جہاں تک میرا خیال ہے بارٹر سسٹم اکثر انسانوں کی فطرت میں موجود ہوتا ہے۔۔۔۔۔۔ آپ کا دوسروں کیلئے احترام خود آپ کیلئے احترام پیدا کرتا ہے۔۔۔۔۔۔ لیکن جہاں تک نظریات کی بات ہے تو مَیں اس میں بغیر کسی کی حاکمیت کو خاطر میں لائے بحث کا قائل ہوں۔۔۔۔۔۔

    جہاں تک اپنی ذہانت کو افضل سمجھنے کی بات ہے تو میں نہیں سمجھتا کہ ایسی بات ہے۔۔۔۔۔۔ میں نے اس ویب سائٹ کے کچھ افراد سے بہت بہت کچھ سیکھا ہے۔۔۔۔۔۔ آج جب میں اپنے آپ کا دو سال پہلے کے بلیک شیپ سے موازنہ کرتا ہوں تو ایک واضح فرق اپنے اندر پاتا ہوں۔۔۔۔۔۔ پہلے میں دو لائنیں نہیں لکھ پاتا تھا بلکہ سچ بتاؤں تو یہاں آنے کا مقصد ہی یہ تھا کہ اپنی لکھنے کی جھجک کو ختم کرسکوں۔۔۔۔۔۔ فارغ جذباتی صاحب نے مجھ پر زور دیا کہ یک سطری جملوں سے آگے بڑھ کر مکمل تحریر لکھوں۔۔۔۔۔۔ ویسے ایک اچھی بات یہ ہوئی کہ میں نے فارغ جذباتی صاحب کا زیادہ لکھنے کا مشورہ تو مان لیا لیکن ان کے خیالات کو نہیں اپنایا ورنہ میں بھی فارغ ہوچکا ہوتا۔۔۔۔۔۔ ابھی کچھ عرصہ پہلے آپ نے مجھے کہا تھا فارغ جذباتی صاحب بھی بہت عمدہ لکھتے ہیں۔۔۔۔۔۔ میں اس حد تک اتفاق کرتا ہوں کہ جذباتی صاحب کی زبان دانی کی صلاحیتیں بہت اچھی ہیں۔۔۔۔۔۔ انگریزی بہت عمدہ لکھتے ہیں۔۔۔۔۔۔ ان کی اردو تحریر بھی اچھی ہے لیکن اکثر اوقات بہت زیادہ ثقیل ہوجاتی ہے۔۔۔۔۔۔ لیکن جو بات مجھے ان کی تحریر میں نظر نہیں آتی وہ دلیل کی طاقت ہے۔۔۔۔۔۔ پاور آف آرگومنٹ ایک بہت اہم چیز ہوتی ہے۔۔۔۔۔۔ جو میری رائے میں خیالات کے نِتھرنے سے ہی آتی ہے۔۔۔۔۔۔

    پہلے میرے خیالات اتنے ریفائنڈ نہیں تھے۔۔۔۔۔۔ میں نے یہاں سے بہت کچھ سیکھا ہے۔۔۔۔۔۔ لیکن ساتھ ساتھ ایک اور پہلو کی طرف بھی توجہ دلاؤں گا کہ یہاں کے بہت بڑے بڑے نام یہاں لکھنا بند کر چکے ہیں۔۔۔۔۔۔ کیا وجہ ہے۔۔۔۔۔۔ میں ان لوگوں میں سے اکثر کو جانتا ہوں اور رابطہ میں رہتا ہوں۔۔۔۔۔۔ ان لوگوں کا کہنا یہ ہوتا ہے کہ اب یہاں سے سیکھنے کو اتنا نہیں ہے۔۔۔۔۔۔ گفتگو کا معیار زوال کی طرف جاچکا ہے۔۔۔۔۔۔ ان میں سے اکثر مجھے بھی کہتے ہیں کہ اب وقت آگیا ہے کہ تم بھی یہ جگہ چھوڑ کے آگے بڑھو۔۔۔۔۔۔ اب یہاں تمہارے سیکھنے کیلئے زیادہ کچھ نہیں ہے۔۔۔۔۔۔ لیکن میرا کہنا یہ ہوتا ہے کہ یہاں ٹٹوؤں کی پھینٹی لگانے کا جو نشہ ہے یہ مجھے کہیں جانے نہیں دیتا۔۔۔۔۔۔ خیر مذاق سے قطع نظر میں نہیں سمجھتا کہ کوئی غرور وغیرہ کی بات ہے۔۔۔۔۔۔ لیکن میری رائے میں ہم میں سے ہر کوئی اپنے اپنے معیار کے مطابق سامنے والے سے کچھ نہ کچھ اوریجنل تِھنکنگ کی ڈیمانڈ ضرور کرتا ہے۔۔۔۔۔۔ میں یہاں کے اکثر تحریکِ انصاف کے حامی افراد سے بحث کرنا وقت کا ضیاع سمجھتا ہوں۔۔۔۔۔۔ اس سے تو بہتر ہے کہ بیٹھا رہوں تصورِ مادھوری کئے ہوئے۔۔۔۔۔۔

    ;-) :-) ;-)

    ایک اور پہلو کی طرف توجہ دلاؤں گا کہ کسی بھی شخص کیلئے اپنے اندر نئے خیالات پیدا کرنے کی صلاحیت اس قدرت کا ہمارے لئے ایک عظیم تحفہ ہے۔۔۔۔۔۔ میرا کہنا ہے کہ اپنی اوریجنل تھنکنگ کو مرنے مَت دو اس کو ختم نہ کرو۔۔۔۔۔۔ کسی مذہب، کسی فلسفہ کو اپنی آزاد خیالی کی راہ میں رکاوٹ نہ بننے دو۔۔۔۔۔۔ اپنے سوچنے پر پابندی کو قبول نہ کرو۔۔۔۔۔۔ یہ چیز اگر کسی فرد میں سے ختم ہوگئی تو اس میں اور کسی غلام میں کوئی زیادہ فرق نہیں رہ جاتا۔۔۔۔۔۔ اور اسی وجہ سے میں خاص طور پر ابراہیمی مذاہب کے خلاف لکھتا ہوں کہ میرے نزدیک یہ مذاہب آپ کے سوچنے کی صلاحیتوں کو زنگ لگاتے ہیں۔۔۔۔۔۔ میں ارتھ ریلیجنز کو پھر بھی تھوڑی بہت اہمیت دیتا ہوں۔۔۔۔۔۔ کیا آپ یا کوئی اور سوچ سکتا ہے کہ گوتم بدھا کے یہ خوبصورت الفاظ کسی ابراہیمی مذاہب میں قبولیت پاسکتے ہیں۔۔۔۔۔۔

    :-) ;-) :-)

    Do not believe in anything simply because you have heard it. Do not believe in anything simply because it is spoken and rumored by many. Do not believe in anything simply because it is found written in your religious books. Do not believe in anything merely on the authority of your teachers and elders. Do not believe in traditions because they have been handed down for many generations. But after observation and analysis, when you find that anything agrees with reason and is conducive to the good and benefit of one and all, then accept it and live up to it.

    -Siddhārtha Gautama Buddha



  • میرا عقیدہ ہے کے بات شاید اتنی بری نہ لگے جتنا بات کرنے کا انداز

    ویسے جب آپ بات کرتے ہیں تو گالی گلوچ پر کیوں نہیں اترتے

    کیا کسی کو گالی دینا بری بات ہے

    اور اگر ہے تو کیوں ہے

    محترم ہپوکریئیٹ صاحب۔۔۔۔۔۔

    آپ کی پہلی بات سے اتفاق کرتا ہوں کہ بات کہنے کا انداز بات میں بہت اثر ڈالتا ہوں۔۔۔۔۔۔ آپ پچھلے ڈیڑھ سال سے مجھے یہ کہہ رہے ہیں لیکن شاید ابھی آتش جواں ہے۔۔۔۔۔۔ میں نے یہاں بارہا صُوفیوں کے بارے میں اپنی پسندیدگی کا ذکر کیا ہے۔۔۔۔۔۔ مجھے ان کی فطرت و طبیعت میں برداشت کا عنصر سب سے اچھا لگتا ہے۔۔۔۔۔۔ صوفی ہی وہ مخلوق ہوتی ہے جو شاید انسانی فطرت کے بارٹر سسٹم پر یقین نہیں رکھتی۔۔۔۔۔۔ مگر میں صوفی نہیں ہوں۔۔۔۔۔۔ صوفی جس اعلیٰ درجہ کے انسان ہوتے ہیں میں وہ قطعاً نہیں ہوں۔۔۔۔۔۔

    ویسے میں آپ کا یہ سوال پڑھ کر مسکرانے پر مجبور ہوگیا کہ میں بات چیت میں گالی گلوچ کیوں نہیں کرتا۔۔۔۔۔۔ آپ بھی میرے ساتھ فلاسیفیکل جمناسٹک کھیل رہے ہیں جو میرا بھی پسندیدہ مشغلہ ہے۔۔۔۔۔۔ ویسے ایک پہلو سے آپ خود سوچئے کہ اگر میں بھی گالم گلوچ کرتا ہوتا تو پھر معزز بلاگر کے ساتھ کیا کیا نہیں کرتا۔۔۔۔۔۔ بے شک بلیک شیپ کے ہر کام میں مصلحت پنہاں ہوتی ہے۔۔۔۔۔۔

    خیر مذاق سے قطع نظر یہ سوال کہ میں گالم گلوچ کیوں نہیں کرتا۔۔۔۔۔۔ تو شاید ایک اہم وجہ میرے گھر کی تربیت ہے۔۔۔۔۔۔ بچپن اور لڑکپن میں اگر عادات پختہ ہوجائیں تو ان سے چھٹکارا مشکل ہوتا ہے۔۔۔۔۔۔ انگریزی کی ایک کہاوت اسی پر روشنی ڈالتی ہے کہ۔۔۔۔۔۔ مجھے ایک سات سال کا بچہ دے دو میں تمہیں ایک آدمی لوٹاؤں گا۔۔۔۔۔۔ اسی وجہ سے میں بچوں کو مذہبی تعلیمات دینے کے سخت خلاف ہوں۔۔۔۔۔۔ باقی میرا اپنا ضبط ہے۔۔۔۔۔۔

    آپ نے مجھے ایک دو دن پہلے یہ کچھ لکھا تھا کہ۔۔۔۔۔۔

    کیا وجہ ہے کے اگر میرے گھر کی خواتین چادر پہنتی ہیں تو آپ انکے چادر پہننے پر مجھ پر تنقید نہیں کرتے

    کیا وجہ ہے کے آپ مجھ سے یہ نہیں کہتے کے میرے گھر کی خواتین چھوٹے کپڑے زیب تن کریں

    ہپوکریئیٹ صاحب سیاسی فکر کے لحاظ سے میں اپنے آپ کو لِبریٹیرین ازم سے قریب پاتا ہوں۔۔۔۔۔۔ اس سیاسی فلسفہ کا جو مَحور ہے وہ آزادی ہے۔۔۔۔۔۔ ہرچند کہ میں اس بات پر بھی یقین رکھتا ہوں کہ حقیقی دنیا میں کہیں بھی کامل آزادی وجود نہیں رکھتی۔۔۔۔۔۔ لیکن مختلف معاشروں کا وہاں حاصل آزادیوں کی مقدار کا موازنہ پھر بہت اہمیت اختیار کرجاتا ہے۔۔۔۔۔۔ لِبریٹیرین ازم کا بھی اپنا ایک یوٹوپیا ہے۔۔۔۔۔۔ لیکن اس کے ساتھ ساتھ حقیقی دنیا کے زمینی حقائق یعنی رئیل ازم کو بھی فراموش نہیں کیا جاسکتا۔۔۔۔۔۔ طاقت کی ایک اپنی نفسیات ہوتی ہے۔۔۔۔۔۔ میرے خیال میں کسی بھی قسم کا یوٹوپیا اسی لئے وجود میں نہیں لایا جاسکتا کہ انسان کے اندر سے طاقت کے لالچ اور مزید طاقت حاصل کرنے کے لالچ کو ختم نہیں کیا جاسکتا۔۔۔۔۔۔ لالچ انسانی فطرت کا ایک اہم جُز ہے۔۔۔۔۔۔ میں لالچ کے اچھے یا برے ہونے پر بحث نہیں کررہا۔۔۔۔۔۔ اگر نصرت جاوید کے الفاظ میں کہوں تو لالچ کے مکمل طور پر اچھے یا مکمل طور پر برے ہونے کا تعین کرنے کیلئے میرے دماغ میں ایک عدد پارسا کٹھ مُلا ہونا چاہئے جس کو بدقسمتی سے میں نے بہت عرصہ پہلے ہی نکال باہر کیا۔۔۔۔۔۔ ویسے بھی صحیح اور غلط کچھ نہیں ہوتا۔۔۔۔۔۔ صرف اپنا اپنا نقطہِ نظر ہوتا ہے۔۔۔۔۔۔

    اب آپ کی بات پر آتے ہوئے کہوں گا کہ میں کسی کو نہیں کہتا کہ چھوٹے چھوٹے کپڑے پہنو۔۔۔۔۔۔ ننگے گھومو یا پھر خیمے نما برقعے پہنو۔۔۔۔۔۔ یہ کچھ حد تک آپ کے اپنے اوپر منحصر ہے اور بہت حد تک اس معاشرے پر منحصر ہے کہ وہ آپ کو کتنی آزادی مہیا کرتا ہے۔۔۔۔۔۔ ہم جیسے لوگ جو پاکستان چھوڑ کر مغربی معاشروں میں آگئے ہیں اس کی ایک بڑی وجہ یہ بھی ہے کہ یہاں، ان مغربی معاشروں موجود انفرادی و اجتماعی ہر قسم کی آزادیاں ہمیں بہت اپیل کرتی ہیں۔۔۔۔۔۔ مکمل آزادی یہاں پر بھی نہیں ہے لیکن پاکستانی معاشرے سے یقیناً زیادہ ہے۔۔۔۔۔۔ ہمیں شاید خود اندازہ ہی نہیں ہوتا کہ ہم آزادی نام کی جنس سے کس قدر پیار کرتے ہیں لیکن پھر کبھی مذہب کے نام پر یا کبھی کسی اور نام پر اسی آزادی کو محدود کرنے کی بھی کوشش کرتے ہیں۔۔۔۔۔۔

    :-) ;-) :-)



  • سلام ہائی پوکریٹ بھائی جی

    کیوں اپنا قیمتی وقت ضائع کرتے ہیں؟ آپ کسی کوڑھی کو کسی دلیل، کسی منطق اور کسی ثبوت سے قائل نہیں کر سکتے

    کہتے ہیں کہ کتے اور کالی بھیڑ کی دم سو سال بھی بانس میں ڈالے رکھو تو وہ ٹیڑھی کی ٹیڑھی ہی نکلے گی. حد یہ ہے کہ یہ کالی بھیڑیں مطالبہ کرتی ہیں کہ انہیں اشرف المخلوقات کا درجہ دیا جائے

    پنجابی کی ایک کہاوت ہے کہ **ڈنڈا پیر اے بگڑیاں تگڑیاں دا

    **

    انکا علاج ایک ہی ہے اور وہ ہے انکی برقی چھترول

    **

    دن رات برقی چھترول - سولہ نمبر چھتر کے ساتھ

    **

    :) :)



  • مجھے تو ہپوکرت بھائی پر ترس آ رہا ہے کہ دو گٹھ گٹھ کی بونگیاں پڑھنا بہت ہی صبر آزما کام ہے شائد وہ ہی اکا دکا لوگوں میں سے ہوں جو صرف کسی کا دل رکھ لینے کی خاطر اس قسم کی فضولیات پر بیل بوٹے سجا کر رونق بخش دیتے ہیں

    :-)