New Year's Celebrations



  • السلام و علیکم

    دنیا کے بیشتر بڑے اور اہم شہروں کی طرح لندن خاص کر سینٹرل لندن میں بھی ہر سال 31 دسمبر کی رات کو سال نو کا جشن منایا جاتا ہے اور لندن آئی کے ارد گرد بہت زبردست آتشبازی کی جاتی ہے جو کہ دیکھنے سے تعلق رکھتی ہے۔ جس کو دیکھنے کیلیے بڑی تعداد میں لوگ وہاں آتے ھیں اور اس دن ٹرین، ٹیوبز اور بسیں بھری ہوتی ہیں۔ خیر میرا یہاں یہ سب لکھنے کا مقصد ان تقریبات کی تعریف کرنا نہیں بلکہ ایک ایسی بات بیان کرنا ہے جس کا مشاہدہ جب بھی کرتا ہوں تو اللہ کا شکر ادا کرتا ہوں اور اس کے بعد جو لوگ اپنے حواس میں نہیں ہوتے تو ان کے اوپر افسوس کرتا ہوں۔

    عام حالات میں بظاہر معقول نظر آنے والے اور نظم و ضبط کی پابندی کرنے والے لوگ اس دن اس طرح کی حرکات کررہے ہوتے ھیں یا اس حالت میں ہوتے ھیں کہ اس وقت ان میں اور جانوروں میں تمیز کرنا مشکل ہوجاتا ہے۔ نشے میں دھت یہ لوگ شاید اس وقت عقل و دانش سے کوسوں میل دور ہوتے ھیں۔ اس کے علاوہ گوریاں چاہے وہ جوان یا عمر رسیدہ ہی کیوں نہ ہوں اس موسم میں بھی نیم عریاں ہوتی ہیں اور اکثر چونکہ حواس میں نہیں ہوتیں تو موقع پرست لوگ جو بہت بڑی تعداد میں وہاں ہوتے ھیں جن میں ایشائی خاص کر پاکستانی لڑکے بھی ایسے مواقع کا بھرپور فائدہ اٹھاتے ھیں۔ ایسی حالت دیکھ کے ان لوگوں پہ ترس بھی آتا ہے اور یہ احساس بھی ہوتا ہے کہ یہ لوگ شاید اس وقت انسان کے درجے پہ نہیں ہیں کیونکہ انسان اور جانور میں بنیادی فرق عقل کا ہے اور شاید اس وقت ان کو اپنے رشتوں تک کی تمیز نہیں ہوتی۔

    شکر اللہ کا میں اس بات پہ بجا لاتا ہوں کہ اللہ نے ہمیں شراب جیسی لعنت جسے ام الخبائث بھی کہا جاتا ہے سے محفوظ رکھا ہوا ہے۔

    ویسے تو ہوش و حواس سے عاری یہ لوگ ہر ہفتے کے آخر پہ بھی ہوتے ھیں، لیکن جو مناظر سال نو پہ ہوتے ھیں وہ ایک باضمیر انسان کو کبھی اچھے نہیں لگ سکتے۔

    اللہ رب العزت ہم سب کو ان خرافات سے بچنے اور صراط مستقیم پہ چلنے کی توفیق عطا فرمائے۔ آمین۔



  • ایک خبر

    .

    .



  • لندن کے علاوہ ایڈنبرا اسکاٹ لینڈ میں بھی نیو ایئر کی بہت بڑی تقریب ہوتی ہے


Log in to reply
 

Looks like your connection to Discuss was lost, please wait while we try to reconnect.