And here goes the solo flight of PTI



  • تحریک انصاف نے تنہا الیکشن لڑنے کا اعلان کر دیا:

    چکوال، چوآں سیداں(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین ۔10فروری۔ 2013ء)تحریک انصاف نے تنہا الیکشن لڑنے کا اعلان کر دیا، عمران خان کا کہنا ہے کہ اہم معاملات پر نظریاتی جماعتیں تحریک انصاف کے ساتھ مل سکتی ہیں۔ نجی ٹی وی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ صدر آصف علی زرداری کے ہوئے ہوئے پاکستان میں کبھی غیر جانبدار الیکشن نہیں ہو سکتے۔ الیکشن کمشن کے ارکان کی تعیناتیاں سیاسی بنیادوں پر کی گئی ہیں۔ ان سب کا آپس میں مُک مُکا ہو چکا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ صاف و شفاف الیکشن ہی ملک کا مستقبل ہیں۔ ہم الیکشن میں دیر نہیں چاہتے لیکن صدر زرداری کے ہوتے ہوئے کسی صورت انتخابات غیر جانبدار نہیں ہو سکتے۔ عمران خان نے دنیا نیوز سے گفتگو میں کہا کہ آئندہ انتخابات میں تحریک انصاف کسی سے الائنس نہیں کرے گی بلکہ تنہا الیکشن میں حصہ لے گی تاہم ان کا کہنا تھا کہ اہم معاملات پر نظریاتی جماعتوں سے مل سکتے ہیں۔ اس سے قبل چکوال اور چوآں سیداں میں پارٹی ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جب انہوں نے فاٹا میں فوج نہ بھیجنے کی بات کی تو سابق صدر پرویز مشرف نے انھیں بغیر داڑھی والا دہشتگرد کہا۔ آج میری بات سچ ثابت ہوئی کہ فاٹا میں فوج بھیجنے کا کتنا نقصان ہوا۔ ہم حالت جنگ میں آگئے ہیں۔ امریکہ کی جنگ کو اپنی جنگ بنا دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 15 مارچ تک تحریک انصاف کے پارٹی انتخابات مکمل ہو جائیں گے، چیئرمین کا بھی انتخاب ہوگا۔ عمران خان نے کہا کہ وہ 23 مارچ کو لاکھوں افراد کے ساتھ مینار پاکستان میں جشن جمہوریت منائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن کے خاتمے کیلئے ٹیکس کی ادائیگی کو لازمی بنانا ہوگا ٹیکس کا دائرہ کار بڑھانا ہوگا اور بڑے کھاتہ داروں اور سرمایہ داروں سے بھی ٹیکس وصول کرنا ہوگا تاکہ وہ پیسہ ملک کی ترقی اور خوشحالی پر خرچ کیاجا سکے۔



  • Bes is ki kasar reh gayi thi



  • ہم الیکشن میں دیر نہیں چاہتے لیکن صدر زرداری کے ہوتے ہوئے کسی صورت انتخابات غیر جانبدار نہیں ہو سکتے۔

    .

    .

    مجتبیٰ بھائی - سلام

    اس کا کیا مطلب ہے؟

    کیا الیکشن کا بائیکاٹ کیا جائے گا؟

    کیا الیکشن ہارنے کے بعد دھاندلی کا شور مچایا جائے گا؟

    یا پھر

    الیکشن ملتوی کروانے والوں کے لیے ان ڈایریکٹ اپنی رضا مندی کا اظہار ہے؟



  • Confidence of the man, MA.



  • اصغر خان کی یاد تازہ ہو گی



  • ^^

    Asghar Khan case se b ye kaam hogaya hoga. Nai?



  • ایک پرانا کومنٹ

    کبھی یہی دن ایئر مارشل اصغر خان پر بھی تھے. وہ تو بے چارے خیالوں میں وزیر اعظم بن کر ایران کا چکر بھی لگا آئے تھے اور اس خطے میں امریکہ کے مفادات کے محافظ شہنشاہ ایران سے امریکی اشیرباد بھی لے آئے تھے لیکن جیسے ہی بھٹو قابو میں آگیا تو اصغر خان کو ٹشو پیپر کی طرح استعمال کرکے پھینک دیا گیا اب ایک اور خان اسی لائین اور رسے پر چل رہا ہے

    راستہ وہی ہے، طریقہ وہی ہے، طاقت وہی ہے. انجام کار مختلف کیسے ہوگا؟



  • ^^

    Is baar kon qaabu main aa gaya hai? Nawaz Sharif? :)



  • کوشش جاری ہے

    چابی والے بابے کی درآمد، بابے نیازی کے انقلابیوں کا بھاگ کر جانا اور اسکے پاؤں پکڑنا، ایم کیو ایم کا اسکی غیر مشروط حمایت کرنا، چوھدریوں کا اسکے دربار کے دن رات چکر لگانا اور پی پی پی والوں کا جپھیاں ڈالنا سب اسی سلسلے کی کڑی ہے



  • Nai koshish kdr jaari hai, IK say to haath uth gaya na establishment ka, to koi qaabu aa gaya hoga. LOL

    Bhaag sharif fer phadeya gaya? :P



  • بابے نیازی کی اس تنہا پرواز اور الیکشن کے نتائج کے بعد انقلابی بچے خیالوں کی دنیا سے باہر نکل کر عملی زندگی میں داخل ہو چکے ہونگے اور زندگی کی حقیقتوں سے روشناس بھی ہو چکے ہونگے. اسوقت انہیں کوئی جنرل پاشا سبز باغ بھی نہیں دکھا سکے گا اور وہ بہتر فیصلے کر سکیں گے

    تب تک بابا نیازی بھی اصغر خان بن چکا ہوگا اور اکیلا بھی تحریک انصاف چلا رہا ہوگا - پھر کوئی نیا انقلابی فوجیوں کے کہنے پر بابے نیازی کی تحریک انصاف کو اپنی پارٹی میں ضم کر رہا ہوگا اور یہ سلسلہ یونہی چلتا رہے گا

    یہ چمن یونہی رہے گا اور ہزاروں جانور

    بولیاں سب اپنی اپنی بول کر اڑ جائیں گے

    اصغر خان کے بارے میں میں دعوے سے کہہ سکتا ہوں کہ اپنے مخالفوں کو لتاڑنے کے باوجود وہ نہایت ہی نفیس آدمی تھے اور کبھی کسی کی ذات یا خاندان پر کیچڑ نہیں اچھلتے تھے جبکہ عمران خان اپنے جلسوں میں اپنے مخالفین کے لیے نہ صرف خود گھٹیا الفاظ اور گری ہوئی زبان استعمال کرتا ہے بلکہ اپنے انقلابیوں کو بھی اسکی ترغیب دیتا ہے

    وہ سمجھتا ہے کہ یہی اسکی کامیابی کی ضمانت ہے



  • @Bawa,

    Bhai ! I think ur 3rd and 4th options are very likely to happen. In fact 3rd one (dhandhli ka shor) is a must foreseeable. Rather add that we as a nation should be ready to get abused and called jahil jangli and ghulam etc .



  • مجتبیٰ بھائی

    عوام کو برا بھلا کہنا اور گالیاں تک دینا شکست خورہ لوگوں کا شیوہ ہوتا ہے. جو لوگ ہر جلسے جلوس میں اپنی مقبولیت کے دعوے کرتے تھے آج وہ لوگ عوام کے پاس جانے سے ڈرتے ہیں اور انتخابات کا التوا چاہتے ہیں. جوں جوں الیکشن قریب آئے گا سب بلے بلیاں تھیلوں سے باہر نکل آئیں گے اور عوام انکی شکلوں کو اچھی طرح پہچان لیں گے

    عمران خان اور تحریک انصاف کو ہمت کرکے انتخابات میں حصہ لینا چاہئیے کیونکہ انتخابات ہی کسی پارٹی یا شخصیت کی مقبولیت کا پیمانہ ہوتے ہیں. اگر کسی کو اپنی مقبولیت کی اتنی ہی غلط فہمی ہے تو اسے انتخاب میں حصہ لیکر اپنی غلط فہمی دور کر لینی چاہئیے - اچھی اور مضبوط سیاسی پارٹیاں نہ تو بلا وجہ دھاندلی کا شور مچاتی ہیں اور نہ ہی کبھی جعلی ووٹ کاسٹ ہونے دیتی ہیں کیونکہ انکے کارکن / پولنگ ایجنٹس ایک ایک بندے سے واقف ہوتے ہیں. جعلی ووٹوں اور دھاندلی کا شور وہ مچاتے ہیں جنکے پاس تربیت یافتہ ٹیم نہیں ہوتی ہے یا پھر جن کو اپنی شکست روز روشن کی طرح عیاں نظر آتی ہے

    اسوقت ایک طرف وہ لوگ ہیں جو پچھلے پانچ سال سے انقلاب اور سونامی کے نعرے بلند کر رہے تھے اور انتخابات میں کلین سویپ کے دعوے کر رہے تھے اور اب جوں جوں الیکشن قریب آ رہے ہیں تو انکے کانوں سے دھواں اٹھنا شروع ہوگیا ہے اور ٹانگیں کانپ رہی ہیں اور بہانوں بہانوں سے الیکشن ملتوی کروانے کے حربے استعمال کر رہے ہیں. کبھی یہ فرمایا جا رہا ہے کہ الیکشن کمیشن کی تشکیل نو کی جائے، کبھی کہا جا رہا ہے کہ زرداری کے صدر ہوتے ہوئے وہ انتخابات میں حصہ نہیں لیں گے اور کبھی طاہر القادری کے پاؤں پکڑے جا رہے ہیں کہ انکی الیکشن سے جان چھڑائی جائے

    دوسری طرف وہ ہیں جنہوں نے نا مساعد حالات میں حکومت کی اور عوام کی جہاں تک ہو سکا خدمت کی اور اب اپنے کارکردگی کی بنیاد پر عوام کی عدالت میں جانے کو بیقرار ہیں. وہ الیکشن کے کسی بھی طرح التوا کے سخت خلاف ہیں اور جرات مندی کے ساتھ عوام کا فیصلہ سننے کے خواہشمند ہیں

    آخر بزدل لوگ عوام کا سامنے کرنے سے کیوں ڈرتے ہیں اور کیوں الیکشن کا التوا چاہتے ہیں؟ جرات ہے تو عوام کی عدالت میں آئیں

    تحریک انصاف کی ساری سیاست مخالفت برائے مخالفت پر چل رہی ہے. سونامی اور کلین سویپ کے ڈرامے صرف خالی کھوکھلے نعرے ہیں اور عوام ان کو اب خوب سمجھتی ہے. تحریک انصاف زیادہ سے زیادہ یہ کر سکتی ہے کہ کچھ شہروں میں نوں لیگ کے کچھ ووٹ توڑے لے اور پی پی پی کو ان ڈاریکٹ فایدہ پہنچائے . پی تی آئی کا ٹارگٹ نوں لیگ ہے پی پی پی نہیں. پی پی پی کی شکست میں ہمیشہ پنجاب اہم کردار ادا کرتا ہے. جب پنجاب میں ووٹ تقسیم ہونگے تو اسکا فایدہ لازمی طور پر زرداری کو ہوگا اور اسکے دوسرے نمبر پر آنے والے امیدوار بھی جیت جائیں گے. اسٹبلشمنٹ بھی یہی چاہتی ہے کہ پنجاب میں نواز شریف کمزور ہو تاکہ وہ بہتر سودا بازی کرنے کی پوزیشن میں رہے. باقی یہاں تک نوں لیگ کو ہرانے کی بات ہے تو یہ کوئی آسان کام نہیں. نوں لیگ کے پاس وہ انتخابی ٹیم ہے جو الیکشن لڑنے اور جیتنے میں ماہر ہے. پی تی آئی اسکا مقابلہ نہیں کر سکے گی اور پھر نون لیگ کی حکومت کی کارکردگی باقی ساری حکومتوں سے بہتر رہی ہے اور اسوقت اسکی جیت یقینی ہے

    اگر سپریم کورٹ یہ کہنے کے بعد کہ "الیکشن کسی صورت ملتوی نہیں ہونے دیں گے" کسی طرح بھی الیکشن کے التوا میں حصہ دار بنتی ہے تو اسکا صاف صاف مطلب یہی ہوگا کہ سپریم کورٹ نے بھی تھوک کر چاٹ لیا ہے. سپریم کورٹ سے امید ہے کہ وہ انتخابات کے انعقاد میں رکاوٹ نہیں بنے گی اور عوام کو وقت پر اپنے نمایندے چننے دے گی



  • Mujtaba

    "تحریک انصاف نے تنہا الیکشن لڑنے کا اعلان کر دیا:

    I think this could also mean ...... before elections every one would have left PTI and IK will تنہا stand in elections on PTI ticket


Log in to reply
 

Looks like your connection to Discuss was lost, please wait while we try to reconnect.