تحریک انصاف میں ٹکٹوں پر لڑائی



  • http://www.dailypakistan.com.pk/national/04-Apr-2013/39820

    لاہور (جنرل رپورٹر ) تحریک انصاف میں ٹکٹوں کی تقسیم پر اختلافات کم نہیں ہو سکے بلکہ بڑھ گئے ہیں اور تحریک انصاف کے یونٹی گروپ نے لاہور سے جاری ہونے والے ٹکٹ بھی واپس کرنے کا اعلان کر دیا ہے جس سے تحریک انصاف انتخابی مہم کے دوران ہی باہمی خلفشار کا شکار ہو گئی ہے۔ تحریک انصاف کے یونٹی گروپ کو پارٹی کے پارلیمانی بورڈ نے حسب منشاء امیدواروں کی سیاسی پوزیشن کے مطابق ٹکٹ جاری نہیں کئے بلکہ لاہور سے صرف علیم خان اور طالب سندھو کو ٹکٹ جاری کئے گئے۔ تحریک انصاف لاہور کے صدر علیم خان نے این اے 127 اور پی پی 147، سینئر نائب صدر جمشید اقبال چیمہ نے پی پی 146، میاں افتخار احمد پی پی 145، محمد یامین ٹیپو پی پی 144، حامد سرورپی پی 157، میاں حامد میراج پی پی 123 اور طالب سندھو نے این اے 130 سے ٹکٹ واپس کر دیئے ہیں۔ تحریک انصاف لاہور کے صدر اور یونٹی گروپ کے سربراہ علیم خان نے بتایا ہے کہ انہوں نے اپنے فیصلے سے پارٹی قائد عمران خان کو ای میل، ایس ایم ایس اور خط کے ذریعے آگاہ کر دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ہم تبدیلی کیلئے کوشاں ہیں لیکن تحریک انصاف کے مرکزی پارلیمانی بورڈ نے جن رہنماﺅں کو ٹکٹ جاری کئے ہیں انہیں کارکن جانتے تک نہیں اور اندیشہ ہے کہ الیکشن میں پارٹی کو انتخابی نتائج میں نقصان کا سامنا ہو سکتا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے واضح کیا کہ انہوں نے پارٹی بنائی ہے وہ پارٹی سے استعفے نہیں دیں گے جبکہ اختلاف رائے ان کا حق ہے اور الیکشن میں وہ پارٹی کے امیدواروں کا بھرپور ساتھ دے کر تبدیلی کی کوشش جاری رکھیں گے۔ ذرائع کے مطابق عمران خان نے علیم خان کو ٹیلی فون کر کے آگاہ کیا ہے کہ ٹکٹوں کی تقسیم حرف آخر نہیں ہے اس میں ترمیم بھی ہو سکتی ہے۔ ذرائع کے مطابق عمران خان نے ان ناراض رہنماﺅں کو اسلام آباد بھی طلب کر لیا ہے اور کسی بھی لمحے تحریک انصاف کی ٹکٹوں کے بارے میں کوئی نیا فیصلہ متوقع ہے۔ واضح رہے کہ قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 124 سے جمشید اقبال چیمہ کے بجائے مفکر پاکستان علامہ اقبال کے پوتے ولید اقبال کو ٹکٹ جاری کیا گیا اور جمشید اقبال چیمہ کو صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی پی 146 کا ٹکٹ جاری کیا گیا۔ اسی طرح تحریک انصاف کے اہم امیدوار اور پیپلز پارٹی کے ٹکٹ پر پنجاب اسمبلی کے رکن منتخب ہونے والے رشید بھٹی کو بھی ٹکٹ نہیں دیا گیا۔ تحریک انصاف میں ٹکٹوں کی تقسیم کے اس عمل نے یونٹی گروپ کو بددل کیا ہے اور گروپ نے تمام ٹکٹ واپس کر دیئے ہیں۔



  • What happened to the pledge that PTI would only issue tickets based on the recommendations of the local elected leadership. Aleem Khan group won the Lahore PTI elections, so they should recommend all Lahore tickets; instead they only got two tickets, the rest are nominations.

    Why go through long party elections if that means didly-squat.