ماڈل ٹاؤن کیس: وزیر اعظم، وزیر اعلیٰ کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم



  • لاہور کی مقامی عدالت نے آج پاکستان کے وزیر اعظم نواز شریف، ہنجاب کے وزیر اعلیٰ شہباز شریف، آٹھ وزرا جن میں صوبائی اور وفاقی وزرا شامل ہیں اور پولیس کے اعلیٰ عہدیداران سمیت اکیس افراد کے خلاف سانحہ ماڈل ٹاؤن کا مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا ہے۔

    منہاج القران کی انتظامیہ اور مقتولین کے لواحقین نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کی کسی بھی پولیس سٹیشن میں ایف آئی آر درج نہ ہونے پر چند دن بعد عدالت میں سیکشن 22 اے بی کے تحت درخواست دائر کی جن میں وزیراعظم، وزیراعلیٰ پنجاب اور اکیس افراد کے خلاف قتل اور ڈکیتی کا مقدمہ درج کرنے کی استدعا کی گئی تھی۔

    ایڈیشنل سیشن جج اجمل خان نے اس کیس کی سماعت کی اور سنیچر کی صبح اس پر فیصلہ محفوظ کر لیا جبکہ شام کو عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے پولیس کو قانون کے مطابق مقدمہ درج کرنے کا حکم جاری کیا۔

    منہاج القران کی جانب سے حاضر ہونے والے وکیل اشتیاق چوہدری نے بی بی سی کو بتایا کہ وہ پیر اٹھارہ اگست کو پولیس سٹیشن جا کر عدالت کے حکم کے مطابق مقدمہ درج کروائیں گے اور ان کا کہنا ہے قتل اور ڈکیتی کے مقدمے میں گرفتاری ضروری ہوتی ہے۔

    ایڈووکیٹ اشتیاق چوہدری کے مطابق ان افراد پر دفعہ 302، 392 اور 395 کے تحت مقدمہ درج کروایا جائے گا کیونکہ پولیس نے ناصرف فائرنگ سے لوگوں کو قتل کیا بلکہ بندوق کی نوک پر منہاج القران میں موجود سامان جس میں الیکٹرانکس اور کمیوٹر وغیرہ شامل تھے اٹھا کر لے گئی۔

    سترہ جون کو لاہور کے علاقے ماڈل ٹاؤن میں ادارہ منہاج القران کے گرد لگائے گئی حفاظتی رکاوٹوں کو ہٹانے پر پولیس اور منہاج القران کے اراکین کے درمیان تصادم ہوا تھا اور پولیس کی شیلنگ اور فائرنگ سے خواتین سمیت چودہ افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے تھے۔

    http://www.bbc.co.uk/urdu/pakistan/2014/08/140816_model_town_case_court_order_tim.shtml



  • adnak Jee

    Things are getting quite serious, aren't they?



  • Sure, these are!



  • السلام علیکم

    اس بات کی بھی تحقیقات ہونی چاہیے کہ اس جگہ پہ منہاج القرآن کے لوگوں کے پاس اتنی تعداد میں اسلحہ کیوں تھا اور کیا سارے پولیس کی گولیوں سے جاں بحق ہوئے ہیں یہ کراس فائرنگ کے نتیجے میں بھی ہلاکتیں ہوئی ہیں۔۔۔کیا جو اندر اسلحہ تھا وہ قانونی تھا یا غیر قانونی۔۔۔۔۔۔ جی آئی ٹی رپورٹ میں کافی چیزیں واضح ہو جائیں گی۔۔۔۔اور اگر قادری کے اوپر اپنے لوگوں کو بغاوت پہ اکسانے اور اشتعال دلانے کا کیس بھی ہونا چاہیے جس طرح وہ خاتون قسم لے رہی تھی کہ تم نے اپنی جگہ نہیں چھوڑنی۔۔۔



  • True ukpaki jee. Any criminal activity by any one should be investigated in a neutral and transparent manner and culprits must be punished according to the law, irrespective of their religious, political or any other affiliation.



  • Well said, Friend Ayatullah Adnak.



  • Don't take it as great development, the decision would be overturned by their housemate higher court.

    Its a bitter reality that Law is not equal for all. MPA and MNA, who attacked police and police stations, could not be alleged in FIR inspite of video evidence and witnessed, how can one expect FIR against those who are custodian of Higher courts.



  • Correct BitterTruth jee

    It is some thing like "The local Umpire has declared the batsman OUT, on LBW appeal. The batsman is thinking to challenge Umpire's decision before the third Umpire who could be manipulated".

    Having said that, don't you think the decision made by additonal session judge is of extra-ordinary courage?



  • Its a session court's decision which definately will be appealed coz an FIR is already in place plus they haven't specifically asked that case(FIR) should be filed against PM & CM



  • @IQ Sahab,

    they haven't specifically asked that case should be filed against PM & CM

    .

    Decision specifically instructed police to register FIR as narrated by plaintiff. PAT as plaintiff has already nominated 21 accused in their complain. Don't you know that PM & CM names are not in accused list.



  • مبارک ھو ، مباری ھو


    آدھا کام ھوگیا، باقی کا آدھا کام جب گلے میں پھندہ پڑے گا تو باقی کا آدھاکام بھی ھوجائیگا


    خدا قاتلوں کے ساتھہ انصاف کریگا

    قران کہتاھے کہ اے لوگون تم سے پہلے امتیں اسلئیے تباہ ھوگئیں کیونکہ وہ بڑے لوگون کو انکے جرائم پر سزانہیں دیتی تھیں --ھے کوئی انکاری گلو



  • Decision specifically instructed police to register FIR as narrated by plaintiff. PAT as plaintiff has already nominated 21 accused in their complain. Don't you know that PM & CM names are not in accused list.

    I thought nominating persons in the FIR is the right of plaintiff. But police, based on evidence, can include or exclude names in the FIR as there is prerogative of police / investigation in the case lodged.



  • اور پولیس کس کی ہے سپاہی جی - کوئی شک ہے پولیس کس کی ہے گلو بٹ ڈرامہ دیکھنے کے بعد؟۔



  • اور پولیس کس کی ہے سپاہی جی - کوئی شک ہے پولیس کس کی ہے گلو بٹ ڈرامہ دیکھنے کے بعد؟۔

    You might have heard about a murder case against a famous OJSimpson. He was declared as innocent in the criminal case, due to his influence. But, he end up facing a civil case which he lost and end up paying for rest of life.

    Almost 90% of Americans knew that a guilty person went free but they respected law. He lived disgraced life.

    In the end it is up to common Pakistanis how to deal with them in a lawful manner. Any unlawful manner will make them Herod.



  • سب کچھہ معاف ھے ، مگر خون معاف نہیں کرتی کاٹ لینڈ


    یار کچھہ غلطہ لکھہ گیا، سمجھہ میں نہیں آرہا، کچھہ گڈمڈ ھورہاھے --ھے کوئی جو تصیح کردے



  • @Sipahi bhai,

    But police, based on evidence, can include or exclude names in the FIR

    .

    Is it? especially when it has binding of court oder. I didn't know that.



  • السلام علیکم

    یہ ہے جمہوریت اور آمریت کا فرق۔۔۔ جمہوریت میں حکمرانوں کو حساب دینا پڑتا ہے۔۔۔۔ جب یہ معاملہ ہائیکورٹ یا سپیریم کورٹ میں جائیگا تو پھر بھی ن لیگ کو کارروائی کا سامنا کرنا پڑیگا، اگر احتجاج سخت ہوتا گیا تو ہوسکتا ہے شہباز شریف کو وزارت اعلی' سے ہاتھ دھونے پڑیں لیکن آج سے کچھ سال پہلے ایک آمر کے کہنے پہ ایک کرائے کی قاتل جماعت نے کراچی میں بارہ مئی کو پچاس نہتے لوگوں کی لاشیں گرادیں لیکن کوئی استعفے نہیں آئے، وزیر داخلہ سندھ بے غیرتوں کی طرح بیٹھا رہا اور اپنی جماعت کا دفاع کرتا رہا۔۔۔ اور جب عمران خان نے آواز بلند کی تو اس کرائے کی قاتل جماعت نے ایسی ننگی گالیاں کراچی کی دیواروں پہ لکھیں جس کو کوئی باغیرت انسان پڑھ بھی نہیں سکتا تھا اور کراچی میں جانا مشکل ہوگیا تھا عمران خان کا۔۔۔ یہ ہے جمہوریت اور آمریت کا فرق۔۔



  • @Sipahi bhai,

    But police, based on evidence, can include or exclude names in the FIR

    .

    Is it? especially when it has binding of court oder. I didn't know that.

    My sentence was complex & awkward. Sorry.

    My sentence meant to say that FIR will have all names as asked by the plaintiff, but based on evidence police might not include all of those names in the case registered in the court.



  • بھائی صاحب کیوں اپنے ہی پنجے اپنے اپ کو ماررھے ھو اور زیادہ زخمی ھوجاؤگے


    آپ تو ایسے جمہوریت جمہوریت کا راگ الاب رھے ھو جیسے وزیر اعظم یا وزیر اعلیٰ نے خود حکم دیاھے کہ جاؤ ہمارے خلاف پرچہ کٹاؤ ، ہم عدالت میں دفاع کرینے یا قانون کے مطابق متاثرین کے کہنے پر پولیس نے پرچہ کاٹدیا---یہ عدالت نے کٹوایاھے کسی مائی کے لعل میں جراءت ھے جو گلؤں کے خلاف پرچہ کاٹ دے

    آپکو 12 مئی کے علاوہ بھی کچھہ یاد ھے ---جب لوگ گواہی دینے عدالت پہنچے تو کہا کہ عدالت کا گھیراؤ کرتے ہیں اور پھر اسکے بعد وہ وہ پھدو گلو جیف جسٹس بناتھا تو عدالت اسلام آباد یا کہیں اور لگالیتا کس نے منع کیاتھااسکو پتہ تھا کہ وہ اور اسکے ہمنوا اسمیں پھسینگے اسلئیے اس ہوشیار نے کیس ہی نہ کھولا



  • "but based on evidence police might not include all of those names in the case registered in the court"

    or

    but based on PRESSURE police might not include all of those names in the case registered in the court?