تیری سرکار میں پہنچے تو سبھی ایک ہوئے



  • نجم سیٹھی کا نواز شریف سے عہدہ مانگنا اور پھر اس کا ترجمان بن جانا ، فواد چوہدری کا بغض نواز شریف میں مبشر لقمان کے سامنے بیٹھنا اور ایاز میر کا طاہر القادری کے گن گانا

    پستی کی انتہائیں ہیں

    ٹکے دی ہانڈی تے گئی پر کتے دی ذات پچھانی گئی



  • اس بحران نے کافی سارے جغادری صحافیوں کو ننگا کردیا ہے ....مجھے سیٹھی کے نام سے اختلاف ہے ...میں نے اس کی اکثر رائے یا پیشگوئی صحیح ثابت ہوتے دیکھی ہے...اسے کرکٹ سے انس ہے اور اس نے خواہ مخواہ اپنی عزت معمولی سی شوق کے لیے گنوائی