Is Reham Khan Lawfully Divorced?



  • According to the news, Imran Khan sent an email to Reham for divorcing her.

    The question which is overseen by every one is that Is Reham Khan Lawfully Divorced?



  • I am of the view that Reham is not lawfully divorced yet



  • She is still lawful wife of Imran Khan although both have decided to get divorced for which perhaps they have filed a divorce application in a court of law (I don't know the specific court but certainly it would be a family court) for confirmation.



  • ادناک صاحب امتیاز صاحب

    قانونی اور غیر قانونی کے سوال نے ہی کپتان کے مسائل کو اس حد تک بڑھایا ہے . صرف خود سے محبت کرنے والے کپتان کی خود پرستی کو کمرشل میڈیا نے ہوا دی جس سے وہ اپنے قریبی رشتوں سے دور ہو گیا . قریبی رشتوں کی تلاش اور جنسی ہارمونز کا عمل دھرنے کے دوران زیادہ بڑھ گیا . ایک ایسے شخص کے لیے جو اپنی زندگی کا پچھتر فیصد حصّہ گزار چکا ہو ل قانونی اور غیر قانونی کے چکرو ں میں پڑے بغیر اپنی سابقہ بیوی سے رجوع کر سکتا تھا .

    رشتے اور جنسی تسکین دونوں یا صرف جنسی تسکین کے لیے کپتان نے ریہام خان کا انتخاب کیا . لیکن ریہام خان کے رعب ، یا میڈیا کے ڈر یا قانونی اور غیر قانونی کے چکر یا کسی اور وجہ سے ریہام خان کو طویل المدت جنسی تعلق کی بجائے شادی کا پیغام دے دیا .

    کپتان جیسے کوتاہ نظر کے لیے اس تجویز کے دوسرے پہلوؤں کا اندازہ ممکن ہی نہیں تھا . ریھام خان یا ایسی ہی کسی اور خاتون کے ساتھ طویل المدت جنسی رشتے میں ایک جدید خاتون کی جنسی قربت میسر ہوتی . اس خاتون کا کل وقتی کام اپنی نوکری اور پنے بچوں کی پرورش ہوتا . شادی کا نتیجہ یہ نکلا کہ عمران خان کے گھر میں ایک نہیں چار افراد منتقل ہو گئے . ایک بیوی اور اس کے تین بچے . خاتون نے اپنا میڈیا کا کیریر ختم ہونے پر پارٹی کے ذریعے نمایاں ہونا شروع کر دیا

    گھر میں چار اور افراد کی شراکت اور بیوی کی پبلک کے سامنے بھرپور رونمائی کپتان کو گوارا ہو ہی نہیں سکتی تھی . اس لیے اس نے پہلی ہی فرصت میں اس سے نجات حاصل کر لی

    کپتان سے یہ امید نہیں کہ وہ اب بھی میڈیا سے آزاد ہو گا اور قانونی اور غیر قانونی کے چکر سے نجات حاصل کر پائے گا



  • اگر کوئی جھگڑا نہ ہو اور معاملہ فیملی کورٹ تک نہ پھنچے تو پاکستان میں تنسیخ نکاح کا سرٹیفکیٹ جاری کرنے کا اختیار اس یو نین کونسل کے سیکرٹری کے پاس ہے جس کے دائرہ اختیار میں نکاح پڑھایا گیا .

    مفتی سعید نکاح خواں یا اس شخص نے جس کے پاس مفتی نے نکاح رجسٹرڈ کرایا ہوگا نے قانون کے مطابق مقامی یو نین کونسل کو اطلاع دی ہو گی

    عمران خان کے لیے قانونا ضروری ہے کہ وہ نوٹس کی ایک نقل اس کونسل کو بھیجے . جس کا سیکرٹری مصالحت کے تین مہینے پورے ہونے پر طلاق کے موثر ہونے کا سرٹیفکیٹ جاری کر دے گا

    سیکرٹری یو نین کونسل کے پاس اختیار ہے کہ وہ مصالحت یا تصدیق کے لیے جب چاہے جتنی بار چاہے عمران خان یا ریہام خان یا دونوں کو طلب کرے . لیکن امید ہے وہ دھاندلی کے الزام اور اوے سیکرٹری سے بچنے کے لیے اس اختیار کا استعمال نہیں کرے گا

    ویسے ایک باقی اینکروں کی طرح بے وقوف اینکر کا کہنا ہے کہ خوش قسمتی سے نکاح رجسٹرڈ نہیں ہوا . اگرچہ ایسا ممکن نہیں ہے لیکن اگر واقعی ایسآ ہوا ہے تو یہ خوش قسمتی نہیں ریہام خان ، عمران خان اور مفتی سعید پاکستان کے خاندانی قوانین کے تحت گرفتار کیے جا سکتے ہیں



  • عمران خان اگر تین حیض آنے تک ریھام سے جنسی تعلق بحال کرلے تو اس کا اسلامی نکاح بحال ہو جائے گا . اگر مصالحت کی اطلاع یو نین کونسل کو نہ دی جائے تو قانونی نکاح کی تنسیخ ہو جائے گی

    اسلامی اور قانونی نکاح دو علیحدہ چیزیں ہیں

    اگر نکاح ہو اور رجسٹرڈ نہ ہو تو وہ اسلامی ہوگا

    قانونی نہیں

    اگر طلاق یو نین کونسل یا عدالت کے بغیر دی جائے تو وہ اسلامی ہو گی قانونی نہیں

    اگر یو نین کونسل میں طلاق کا عمل مکمل ہوجائے لیکن تین حیض کے دوران رجوع ہو جائے تو طلاق قانونی ہو گی لیکن میاں بیوی اسلامی طور پر میاں بیوی ہوں گے



  • ویسے اس نکاح اور طلاق کا ایک دل چسپ پہلو یہ ہے کہ عمران خان نے کراچی میں پی ٹی آئ کے متحارب گروہوں میں صلح کرنے کے لیے مفتی سعید نکاح خواں کو بھیج دیا ہے



  • I have yet to understand difference between Lawful Divorce and Unlawful Divorce?

    Lawful Marriage and Unlawful Marriage?

    This could be an interesting subject to be discussed.



  • If I am not wrong, for marriage, it is the same in Pakistan like western countries. There, churches have been given the power to pronounce husband and wife. Additionally there are marriage registrar offices where the couple can go and get the marriage certificate. Here in Pakistan, the registered Moulvi of the district has the authority to issue marriage certificate and keep the record of marriages. In the case of divorce there is a big difference between our procedures and that of Western society. There, the divorce seeker/s have to file the application in the family court. Our Islamic procedure for divorce has been very beautifully explained by Zindadil sahib. According Islamic sharia if the husband says verbally "I give you divorce" three times, either in one go or in instalment, the divorce is confirmed and the wife becomes "namahram". Wife seeking divorce does not have this facility, she would have to file the divorce application with reasons for divorce in a family court or union council. I may be missing or telling something not correct in my above explanation, for which I seek guidance from my friends in here.



  • "I have yet to understand difference between Lawful Divorce and Unlawful Divorce?

    Lawful Marriage and Unlawful Marriage?"

    Am I surprised? No.

    I suggest you renounce your fake professorship and re-sit the Matric examination and if you pass, you will understand the difference!!



  • "According Islamic sharia if the husband says verbally "I give you divorce" three times, either in one go or in instalment, the divorce is confirmed and the wife becomes "namahram""

    Just FYI - Not true in Fiqh e Jafria!



  • curiousity sahib: Will you please elaborate what does the Fiqh e Jafria say in case of different conditions of Talaq - just for my knowledge.









  • What was the status of Londis in Islam?

    How they were used for sexual delectation with or without Lawful Nikkah?

    A couple can get into marriage contract just by mutual consent, intention and desire.

    They can get separated the same way.



  • @zindadil

    Can you please try to educate the Fake Professor as well?

    You will be doing a huge favour to the humanity!



  • Governor of Heera Mandi knows better how to promote and protect Lawful Marriage.



  • انجان ، آپ کا کہا سر آنکھوں پر

    شیخ جی

    مروجہ قانون کے تحت بیوی اور لونڈی دونوں کے ساتھ جنسی عمل کیا جا سکتا تھا . اس لیے لونڈی کے ساتھ جنسی عمل قانونی تھا

    شادی کے مختلف مذاہب ، علاقوں اور ادوار میں مختلف طریقے ہوتے ہیں . ہندو مت میں تقریبا بارہ طریقے ہیں جن میں ایک گاندھرو بیاہ ہے جس میں مرد اور عورت گواہ کی عدم موجودگی میں شادی کر سکتے ہیں

    اسلام میں عورت اور مرد کا ایجاب و قبول اور دو گواہوں کی موجودگی لازمی شرط ہے .. مولوی کا ہونا شرط نہیں .... اسی طرح طلاق کا طریقہ بھی بیان کیا گیا ہے

    لونڈی کے ساتھ جنسی عمل کا حق اس کی لونڈی کی حیثیت کی وجہ سے ہوتا تھا جو اس کی آزادی پر ختم ہو جاتا تھا

    لونڈی اور آزاد عورت کے ساتھ جنسی عمل کا حق مختلف طریقوں سے ملتا تھا اور مختلف طریقوں سے ختم ہوتا تھا

    عمران اور ریہام کی شادی اسلامی طریقے اور پاکستانی عآیلی قوانین کے تحت ہوئی تھی اس لیے انہی کے تحت ختم بھی ہو گی



  • zindadil jee

    "عمران اور ریہام کی شادی اسلامی طریقے اور پاکستانی عآیلی قوانین کے تحت ہوئی تھی اس لیے انہی کے تحت ختم بھی ہو گی"

    یعنی کہ شادی فی الحال برقرار ہے ؟۔