سال نواورجشن آمد داعش---- اللہ ہی اللہ



  • وہ بے وقوف وزیرداخلہ اورایجنسیہ حرامیہ اورانکے کرتادہرتا جوانکارپہ انکاری تھے ، وجود داعش کے ، جو کبوترکی طرح آنکھیں موندے بیٹھے تھے اورشترمرغ کی طرح ریت میں گھسائے بیٹھے تھے- آج سال نو کے موقع پرہرطرف اسی کاچرچاہے --ابے یہ ساری کی ساری نمبرون " چ " ایجنسیاں نشے میں ہیں

    اسلامی نظام کے شیداجوق درجوق ہرشہرسے بمعہ اہل وعیال ایک ایسے ملک جارہے ہیں جہاں انکے خیال میں مکمل اسلامی نظام ہوگا- ابے یہ ہرجگہ ہیں ، ہرگلی محلہ میں ہیں ، حتیٰ کہ تمہارے گھروں کے اندرہیں --تمہیں نہیں پتہ کہ تمہارے بہن بھائیوں اورماں باپ میں سے کون داعش کاایجنٹ ہے ، تم نے ذراداعش کے خلاف حرف زنی کی اورتمہاری شامت آئی--پہلے قدرت نے طالبان کی صورت میں وحشی درندوں کے تمہاری گردنوں پر بٹھایااوراب یہ ایک اورتحفہ قدرت کی طرف سے ---جیساکروگے ویسابھروگے ، جوبوگے وہ کاٹوگے---معاشرے میں اگرمعصوم انسانوں پربلاوجہ طلم بربریت کروگے اوروحشی درندوں کی طرح چیرپھاڑ کروگے توویساہی ملے گا

    قدرت کے انصاف پر دل کویک گونہ سکون، ذہن کواطمینان ہوتاہے اورقدرت کے انصاف پر یقین نہیں آتا . لیکن ایساہی ہورہاہے ----مگرتم ، تم کہاں سمجھوگے ---گرسمجھتے توایساکرتے ہی کیوں