"islami faoujain " reaching bonair



  • Aghfanistan ,fata aur sawat ki kamyabi kay baad ab "islami lashker boair main dakhil ho gaya hay aur sawat ki terha yahan bhi hukomat ko ghutnay taiknay per majboor ker dain gi ,aur "dushman ialaqay " pakistan main un kay hami (Qazi ,Imran ,Madaris etC) un ko fateh bananay main un ki bherpoor madat karain gay pehlay kahain gay kay yeh media ka propaganday hay phir jab "islmi foujain " aajain gi tou phir kahain gay un say baat cheek ki jayeh .......

    http://www.bbc.co.uk/urdu/pakistan/2009/04/090407_bunair_swat_clash_zee.shtml

    صوبہ سرحد کے ضلع بونیر میں سوات کے طالبان اور مقامی لشکر کے درمیان پیر کو ہونے والی ایک جھڑپ میں تین پولیس اہلکاروں سمیت چھ افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ حکام نے ہلاکتوں کی تصدیق کر دی ہے۔

    پولیس کا کہنا ہے کہ پیر کو سوات سے درجنوں طالبان ضلع بونیر میں داخل ہو رہے تھے کہ اس دوران اطلاع ملنے پر سینکڑوں مقامی لوگ اسلحہ لے کر مورچہ زن ہوگئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس دوران گولکندہ او ر پیر بابا کے پہاڑی سلسلے میں فریقین کے درمیان جھڑپ شروع ہوئی جو کئی گھنٹوں تک جاری رہی۔

    پولیس نے ہلاکتوں کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ جھڑپ کے دوران پولیس بھی مقامی لشکر کی مدد کو پہنچی اور اس دوران تین پولیس اہلکار اور تین شہری ہلاک ہو گئے۔

    سوات طالبان کے ترجمان مسلم خان نے ہلاکتوں کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اے ایس آئی سمیت تین اہلکاروں اور بونیر کے دو شہریوں کو قتل کردیا ہے۔ ان کے بقول ان افراد کی لاشیں حکام کے حوالے کر دی گئی ہیں ۔

    مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ سوات کے طالبان کا مؤقف ہے کہ وہ بونیر میں قاضی عدالتوں کے قیام کے لیے آئے ہیں جبکہ مسلم خان کا دعویٰ ہے کہ طالبان وہاں اپنے ساتھیوں سے ملنے جارہے تھے۔

    طالبان کے پا کستان کے کسی علاقے میں جانے پر کوئی پابندی نہیں بلکہ طالبان علامہ اقبال کے اس شعر کی تقلید کررہے ہیں کہ' مسلم ہیں ہم وطن ہیں سارا جہاں ہمارا

    مسلم خان

    مسلم خان کے بقول ان کے ساتھیوں پر پاکستان کے کسی علاقے میں جانے پر کوئی پابندی نہیں بلکہ طالبان علامہ اقبال کے اس شعر کی تقلید کررہے ہیں کہ ’مسلم ہیں ہم وطن ہیں سارا جہاں ہمارا‘۔

    دوسری طرف بونیر میں طالبان ابھی تک مورچہ زن ہیں جبکہ فریقین کے درمیان مذاکرات جاری ہیں۔ بات چیت میں سوات کے طالبان رہنماء محمود خان، کمشنر ملاکنڈ سید جاوید، کالعدم نفاذ شریعت محمدی کے نائب امیر مولانا محمد عالم، بونیر کے ضلعی رابطہ آفسر اور پولیس سربراہ حصہ لے رہے ہیں۔

    مقامی لوگ الزام لگا رہے ہیں کہ ملاکنڈ ڈویژن کے کمشنر سید جاوید طالبان حامی ہیں اور ان کی کوشش ہے کہ سوات کے طالبان کو بونیر میں کسی نہ کسی طریقے سے داخل کرا دیں۔

    یاد رہے کہ بونیر کے عوام اور سوات کے طالبان کے درمیان پہلے سے ہی اختلافات چلے آرہے ہیں اور فریقین کے درمیان کئی مسلح جھڑپیں ہوئی ہیں۔ پچھلےسال بونیر میں قومی اسمبلی کے ضمنی انتخابات کے موقع پرطالبان نےشل بانڈئی میں پولنگ اسٹیشن پر مبینہ خودکش حملہ کیا جس میں تقریبا چالیس سے زائد افراد ہلاک ہوئے تھے۔

    سوات میں امن معاہدے کے بعد یہ پہلی مرتبہ ہے کہ سوات کے طالبان مسلح صورت میں کسی دوسرے ضلع میں داخل ہوئے ہیں۔مبصرین کا کہنا ہےکہ اس سے بعض حلقوں کے یہ خدشات تقریباً درست ثابت ہورہے ہیں کہ امن معاہدے کے بعد طالبان دوبارہ منظم ہوکر دیگر علاقوں میں پھیل سکتے ہیں



  • civil war!

    Mulla!



  • I like to see them in JI Mansoora ,Phir pata chalay ga is this propaganda or reality .



  • Netgrr,

    Jub patta na thee tou boley ma tee! Abey dair (one and a half) hoshyaar, we should support these Lashkars as these are made in retalation to these Talabaans. These lashkers are made up of ordinary tribal people who gather for a temporary plan of action. Only these lashkur can stop these Talibaans and not your ISI,DRONES or Army!



  • There will be protest for making these lashker from JI and others

    "Musalman ko Musalman say lerwanay ki yahoodi sazish "



  • Don't worry, these lashkars are not under the infulence of JI but the unfortunate thing is that most of these Massharans (elders) of these lashkirs are very sympathatic towards JUP(fazloo) group. That's why I suggest we get rid of this Maulana Diseal first.

    I can understand that Pakhtoons can be fooled on the name of religion but how come he got seats from punjab and later 10 seats in senate.

    This guy Maulana diseal and people like hafeez pirzada are more dangerous then others.

    Pakistanis should get together and get rid of each and every LOTA from assemblies.



  • khan

    you keep calling taliban islami then i ll keep calling them pakhtoons...so its your call

    don,t giev bbc news here we all know for whom they working for? didn you see that palestine donation appeal drama it was an eye opener for all of us



  • Khan sahib

    agreed.



  • EVIL DESIRE: "TO ESTABLISH THE WRIT OF THE GOVERNMENT BY FORCE"

    I still hear and see debates related with creation bangladesh in which so called civil society openly said “US WAQT MUJEEB SAI BAAT KAR LETEY TU ACHA THA,WO MAMLA BAAT SE BHE HAL HOSUKTA THA,FOUJI OPERATION NAHE KARNA CHAHIYE THA ..blah blah”

    We called mukti bhani as insurgents in east pakistan we forced yahya khan to establish so called writ of the government and to quell rebellion by sending army.

    They went there with popular demand of civil society to crush bengalis with force india was waiting for this moment

    they wanted pakistan to follow that course of collusion and at the end we fought with india in east pakistan lost war and surrendered 90k soldiers as pows.

    Now after 1971 we blamed yaha khan, bhutto, army but anybody ask why we never asked about those who wanted to establish writ of the government by force?

    Next incident came in the form of LAL MASJID and so called civil society pakistan demanded writ of the government should be establish “humay operation kurna chahiye,we have to use force”,government so rahi ha,danda shariyat nae chalni chahiye’ ye log baghi hain” then came army again in picture

    and conducted operation killed hundreds of people including women and established writ of the government in islamabad.

    After this incidence we provided thousands of new recruiters for suicide attacks in pakistan who brought pakistan to its knees.we have intensified the fire of terrorism or so called insurgency in FATA,NWFP and southeren punjab.we accused musharraf,shujjat,army,sheikh rashid,ejaz ul haq but nobody raised voice against those “who invited,encouraged government of pakistan and wanted to establish writ of the government by force”

    Now again masters of human rights and civil society of pakistan including this lady FARZANA BARI demanding writ of the government to be established by force in swat and NWFP

    she wants end of peace accord in swat and begin new operation in swat.

    my question we again asking ARMY to take charge start operation and kill thousands of pashtoons in this operation then came MR USA as savior of pashtoons as INDIA DID in 1971 and we have an independent PAKHTOONISTAN another piece of pakistan would be separated in the name establishing so called writ of the government by force and after this we will be blaming sufi mohammed ,fazlulah,kiyani,zardari,gillani asfandyar,rehman malik ,USA INDIA but nobody will remember who who was the real culprit

    of this incidence “None other than those who desired to establish writ of the government with force”

    The best and last option is to win hearts and minds of pashtoons with peace and dialogue.We need to isolate hard core militants from common people.we have to expose their brutalities and explain our pashtoons brothers that they are not only enemy of pakistan but enemies of pashtoons too ,Their agenda is to distabilize pakistan not to help pashtoons or islam

    I think i have talked alot for those who knows what is actually going on we are falling in our enemies of pakistan

    TRAP if we continue to follow this path “TO ESTABLISH THE WRIT OF THE GOVERNMENT BY FORCE” then as pakistanis we all wll be compelled to say what mushrraf said in his last address to pakistani nation “PAKISTAN KA ALLAH HAFIZ” in furture



  • So, we should hand over pakistan to taliban,is that what you want to say? Writ of govt. should be established but if can be establish by talks it is better. else civil war's biggest reason is that there are many small parallel govts in a state. taliban shariat is not acceptable to pakistanis. although minds are bieng made up by continous himayatis. but they will go abroad and pakistanis will suffer.

    when all the nation is agreed on 1973 constitution, it should be implemented. credit to this civil war situation also goes to powerful people who didnt consider this constitution.



  • I think the same question some one like you asked in 1971

    what happened? we lost bangladesh..we need to give time for peace..there are no short cuts its a very lengthy process tahts i am only requesting..otherwise me and you would say!

    Kash hum ne dialogue kiye hotey?



  • So, we should hand over pakistan to taliban.......

    This line can destroy pakistan designed by enemies of pakistan to motivate us to follow this path of collusion.

    when you fully involved in war with taliban they will as savior of pashtoons and stab you in back just what india did in 1971.



  • Ijay you are right. question is for dialogue you need another party. else it will be a monologue. admit it problem is also from taliban as well.



  • طالبان کا بونیر سے جانے سے انکار

    Now ISlami faouon nay bunair say janay say inkaar ker diya hay ,ab :islami inqilab " ki manzil qareeb hi hay ,"ameer-ul_Momineen " Mullah Umer kay zare saya islami faijain abb Pakistan kay konay konay main pohanch huki hain ,aur khilafat Qayam honay hi wali hay ..

    Inqilaaaaaaaaaaab inqilaaaaaaaaab talbani inqilab

    Yeh mulk bana tha Jamati ,yeh Mulk Rahay ga Jamati

    (by the way Mullah Umer is a Dajjal one eye emerged from Khurasan)

    بی بی سی اردو ڈاٹ کام، پشاور

    سوات طالبان

    مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ سوات کے طالبان اور مقامی لشکر کےدرمیان کشیدگی بدستور برقرار ہے

    صوبہ سرحد کے ضلع بونیر میں مقامی لشکر اور سوات کے طالبان کے درمیان پیر کی رات سے جاری مذاکرات کا پہلا دور ناکام ہوگیا ہے اور طالبان نے سوات واپس جانے سے انکار کردیا ہے۔

    پولیس کا کہنا ہے کہ پیر کے روز سوات سے آئے ہوئے طالبان اور مقامی لشکر کے درمیان ہونے والی جھڑپ کے بعد پیر اور منگل کو فریقین کے درمیان مذاکرات میں کسی قسم کی کوئی پیشرفت نہیں ہوسکی ہے۔ ان کے بقول مذاکرات میں سوات کے طالبان کے نمائندوں نے واپس جانے سے انکار کردیا ہے۔

    ان کے بقول ان کا کہنا ہے کہ وہ ضلع بونیر میں قاضی عدالتوں کے قیام اور نگرانی کرنے کے لیے آئے ہیں جبکہ مقامی لوگوں کا مؤقف ہے کہ یہ کام حکومت خود کرسکتی ہے جس سے ان کی حمایت بھی حاصل ہوگی۔

    حکام کا کہنا ہے طالبان نے تین پولیس اہلکاروں اور دو رضا کاروں کی لاشیں دو دن کے بعد بدھ کو حوالے کردی ہیں۔ ان کے مطابق طالبان نے شرط عائد کردی تھی کہ لاشوں کو وصول کرنے کے لیےصرف ایک گاڑی بھیجی جائے جس میں صرف ڈرائیور سوار ہو۔

    مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ سوات کے طالبان اور مقامی لشکر کےدرمیان کشیدگی بدستور برقرار ہے۔ طالبان نے سوات اور بونیر کو ملانے والے پہاڑی سلسلے کے کئی مقامات پر مورچے سنبھالے ہوئے ہیں جبکہ مقامی لشکر کے درجنوں مسلح رضا کار نیچے اپنے اپنے گاؤں میں پہرے دینے میں مصروف ہیں۔

    فریقین کے درمیان مذاکرات کے پہلے دور کی ناکامی کے بعد شانگلہ سے ایک مشہور عالم دین مولوی کابل گرامہ بونیر پہنچ چکے ہیں جو آج (بدھ) فرقین کے درمیان بات چیت کو کامیاب بنانے کی کوشش کریں گے۔

    فریقین کے درمیان مذاکرات کے پہلے دور کی ناکامی کے بعد شانگلہ سے ایک مشہور عالم دین مولوی کابل گرامہ بونیر پہنچ چکے ہیں جو آج (بدھ) فریقین کے درمیان بات چیت کو کامیاب بنانے کی کوشش کریں گے۔

    یاد رہے کہ بونیر کے عوام اور سوات کے طالبان کے درمیان پہلے سے ہی اختلافات چلے آ رہے ہیں اور فریقین کے درمیان کئی مسلح جھڑپیں ہوئی ہیں۔ پچھلےسال بونیر میں قومی اسمبلی کے ضمنی انتخابات کے موقع پرطالبان نےشل بانڈئی میں پولنگ اسٹیشن پر مبینہ خودکش حملہ کیا جس میں تقریباً چالیس سے زائد افراد ہلاک ہوئے تھے۔

    سوات میں امن معاہدے کے بعد یہ پہلی مرتبہ ہے کہ سوات کے طالبان مسلح صورت میں کسی دوسرے ضلع میں داخل ہوئے ہیں۔ مبصرین کا کہنا ہے کہ اس سے بعض حلقوں کے یہ خدشات تقریباً درست ثابت ہو رہے ہیں کہ امن معاہدے کے بعد طالبان دوبارہ منظم ہوکر دیگر علاقوں میں پھیل سکتے ہیں۔

    http://www.bbc.co.uk/urdu/pakistan/2009/04/090408_bunair_taliban_rh.shtml



  • Ijay,

    Every day when I read a new comment from you, My believe gets stronger that you are an "IDIOT"

    Please open your eyes or get them checked and then read my post again.. If in dobt, read it again another 6 times then go to bed with this Mantra.... May chup rahoun ga ya boloun ga tou logical baat karoun ga!

    As regards to you calling talibaan Pakhtoons... Mate! Its a free world! Call them Islami or Haramee..Pukhtoon or Punjabi as I don't give a flying toss!



  • http://www.bbc.co.uk/urdu/pakistan/2009/04/090421_buner_taliban_rh.shtml

    abb islami fojon nay ahista aahista apnay qadam jamanay shoro ker diyeh hain :)

    بونیر: طالبان کی سرگرمیاں تیز

    عبدالحئی کاکڑ

    بی بی سی اردو ڈاٹ کام، پشاور

    طالبان

    بونیر میں غیر سرکاری اداروں کی گاڑیوں اور اشیاء کو لوٹا گیا ہے: بونیر پولیس سربراہ

    صوبہ سرحد کے ضلع بونیر میں طالبان نے باقاعدہ کارروائیاں شروع کردی ہیں اور انہوں نےگاڑیوں میں موسیقی بجانے پر پابندی لگانے کے علاوہ مختلف واقعات میں غیر سرکاری اداروں کی گاڑیاں اور امدادی اشیاء لوٹ لی ہیں۔

    ضلع بونیر کے پولیس سربراہ رشید خان نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے ان واقعات کی تصدیق کی۔ ان کے بقول گزشتہ کچھ عرصے سے سوات سے آئے ہوئے طالبان کی وجہ سے امن و امان کا مسئلہ خراب ہوا ہے۔

    ان کے مطابق بونیر میں غیر سرکاری اداروں کی گاڑیوں اور اشیاء کو لوٹا گیا ہے جس کی ایف آئی آر درج کرائی گئی ہے۔ ان کے بقول چونکہ ان واقعات میں مبینہ طور پر ملوث ہونے والے طالبان کی انفرادی شناخت نہیں ہوسکی ہے لہٰذا انہوں نے نامعلوم افراد کے خلاف ایف آئی آر دراج کرائی ہے تاہم ابھی تک کسی کو بھی گرفتار نہیں کیا گیا ہے۔

    رشید خان نے مزید کہا کہ آئندہ ایک ماہ بونیر کے لیے بہت اہم ہے اور قاضی عدالتوں کے قیام سے انہیں امید ہے کہ طالبان کی سرگرمیاں کم ہوجائیں گی۔ ان کے بقول انہوں نے جرگے کی مدد سے سوات کے طالبان کے علاقہ سے انخلاء کی کوشش شروع کر دی ہیں البتہ بونیر کے طالبان اگر پرامن رہنا چاہیں تو انہیں وہاں رہنے کی اجازت ہوگی۔

    مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ طالبان نے کوگا کے علاقے میں واقع مہاجر کیمپ کے صحت کے بنیادی مرکز میں گھس کر وہاں سے دوائیاں لوٹ لیں جبکہ اسے ایک دن قبل انہوں نے امبیلہ کے علاقے میں غیر سرکاری ادارے کے لیے کام کرنے والے اہلکاروں کو اغواء کیا تھا جنہیں بعد میں چھوڑ دیا گیا تھا۔ اس کے علاوہ سرکاری حکام کا کہنا ہے طالبان صدر مقام ڈگر میں ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفسر کے دفتر سے بعض غیر سرکاری اداروں کی گاڑیاں لے گئے۔ اس کے ساتھ ساتھ انہوں نے پیر کو ڈگر میں گاڑیاں روک کر ڈرائیوروں کو گانے بجانے سے بھی روکنے کی کوشش کی۔

    مقامی انتظامیہ کچھ نہیں کررہی ہے اور جن لوگوں نے طالبان کے خلاف لشکر بنایا تھا وہ بھی اب تقسیم ہوگئے ہیں۔ حکومت نے طالبان کے ساتھ معاہدہ کرکے ہمارے اور اپنے ہاتھ بھی پیچھے سے باندھ لیے جبکہ طالبان علاقے میں دندناتے پھر رہے ہیں اور کوئی بھی انہیں روک نہیں سکتا۔

    مقامی شخص

    سرکاری حکام کا مزید کہنا ہے کہ پیر ہی کو طالبان نے سکولوں میں تقسیم کیے جانے والے گھی کے ہزاروں ڈبوں کو لوٹ لیا۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ طالبان ٹولیوں کی صورت میں مختلف علاقوں کا گشت کر رہے ہیں جبکہ مساجد میں جاکر لوگوں کو شرعی نظام کے نفاذ میں ساتھ دینے کی ترغیب دے رہے ہیں۔

    ایک مقامی شخص نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بی بی سی کو بتایا کہ مقامی انتظامیہ کچھ نہیں کر رہی ہے اور جن لوگوں نے طالبان کے خلاف لشکر بنایا تھا وہ بھی اب تقسیم ہوگئے ہیں۔ ان کے مطابق ’حکومت نے طالبان کے ساتھ معاہدہ کرکے ہمارے اور اپنے ہاتھ بھی پیچھے سے باندھ لیے جبکہ طالبان علاقے میں دندناتے پھر رہے ہیں اور کوئی بھی انہیں روک نہیں سکتا۔‘

    یاد رہے سوات سے آئے ہوئے طالبان نے تقریباً دو ہفتے قبل ضلع بونیر میں داخل ہونے کی کوشش کی تھی اور اس دوران مقامی لشکر نے مزاحمت کی جس میں تین پولیس اہلکار اور تین رضاکار قتل ہوگئے تھے۔ بعد میں مقامی انتظامیہ اور عمائدین نے طالبان کو علاقے میں داخلے کی اجازت دے دی جنہوں داخل ہوتے ہی پیر بابا کے تاریخی مزار، مدرسے اور دربار پر قبضہ کرلیا۔ تاہم کچھ دنوں کے بعد یہ قبضہ ختم کر دیا گیا تھا۔